تین اسرائیلی سفارت کاروں کیخلاف فوجداری مقدمہ

دہلی ایرپورٹ میں ایمگریشن آفیسر سے بحث و تکرار اور طمانچہ رسید کرنے پر کارروائی

دہلی ایرپورٹ میں ایمگریشن آفیسر سے بحث و تکرار اور طمانچہ رسید کرنے پر کارروائی

نئی دہلی،7 اپریل (سیاست ڈاٹ کام ) پولیس نے کہا کہ اسرائیل کے تین سفارت کاروں کے خلاف اندرا گاندھی انٹرنیشنل ایرپورٹ پر ایمگریشن حکام کو مبینہ زدوکوب پر ایک فوجداری مقدمہ درج کیا گیا ہے۔ تاہم ان تینوں کو پولیس کی طرف سے گرفتار نہیں کیا جاسکا کیونکہ انھیں سفارتی استثنیٰ حاصل ہے۔ ذرائع نے کہا کہ پولیس ان سفارت کاروں کے خلاف الزامات کے تعلق سے تفصیلی رپورٹ وزارت امور خارجہ کو پیش کرے گی۔ یہ واقعہ ہفتہ کی دوپہر لگ بھگ 1:30 بجے ایرپورٹ کے ٹرمینل 3 پر پیش آیا جب یہ تینوں سفارت کار نیپال کے صدر مقام کٹھمنڈو روانہ ہورہے تھے۔ پولیس نے کہا کہ ان تینوں نوجوان سفارت کاروں کو ایمگریشن ضوابط کی تکمیل کیلئے انتظار کرنا تھا کیونکہ کاؤنٹر پر کافی ہجوم تھا لیکن جب ایک عہدہ دار جس کی شناخت سوم ویر کی حیثیت سے کی گئی ہے، جب ان پر ضابطہ کی تکمیل کررہے تھے تو ایک سفارت کار نے اُن پر سست روی سے کام کرنے کا الزام عائد کیا، جس پر اُن دونوں کے درمیان بحث و تکرار ہوگئی۔ دریں اثناء ایک اسرائیلی سفارت کار نے سوم ویر کو طمانچہ رسید کردیا اور دیگر دو نے انھیں ڈھکیل دیا۔ ایرپورٹ حکام نے پولیس کو اس واقعہ کی اطلاع دی جو فوری طور پر وہاں پہنچ گئی۔ ان تینوں سے پوچھ گچھ کی گئی جنہوں نے بتایا کہ وہ اسرائیلی سفارت کار ہیں اور کٹھمنڈو روانہ ہورہے ہیں۔ سارا واقعہ سی سی ٹی وی کیمرہ میں فلمبند ہے۔ پولیس نے تحقیقات کیلئے اس فوٹیج کو محفوظ کرلیا ہے۔ تینوں اسرائیلی سفارتی عہدیداروں کے خلاف شکایت درج کرتے ہوئے اسرائیلی سفارت خانہ کو اس واقعہ کی اطلاع دے دی گئی ہے۔ اس واقعہ سے متعلق کارروائی کے بارے میں ایک سوال پر ڈپٹی کمشنر پولیس (آئی جی آئی ایرپورٹ) ایم آئی حیدر نے کہا کہ قانون کے مطابق کارروائی کی جائے گی۔ یہ اپنی نوعیت کا پہلا واقعہ ہے جس کے بارے میں فی الحال کچھ کہنا قبل از وقت ہوگا۔ وزارت امور خارجہ اس مسئلہ پر کوئی فیصلہ کرے گی۔

TOPPOPULARRECENT