Saturday , November 25 2017
Home / Top Stories / تین دن میں رمضی سے دولت اسلامیہ کے اخراج کا ادعا ٹھکانوں پر بمباری ، 20 افراد ہلاک

تین دن میں رمضی سے دولت اسلامیہ کے اخراج کا ادعا ٹھکانوں پر بمباری ، 20 افراد ہلاک

بغداد 22 ڈسمبر (سیاست ڈاٹ کام) عراقی سکیوریٹی فورسیس نے رمضی شہر کے وسط تک پیشرفت کی جو ماہ مئی سے دولت اسلامیہ کے زیرکنٹرول تھا۔ عراقی انسداد دہشت گردی سرویس کے ترجمان صباح النعمان نے بتایا کہ ہم نے رمضی کے وسط تک پیشرفت کی ہے اور رہائشی علاقوں تک بھی ہماری رسائی ہوچکی ہے جبکہ آئندہ 72 گھنٹوں کے دوران رمضی شہر کو دولت اسلامیہ کے وجود سے مکمل طور پر پاک کرلیا جائے گا۔ رمضی میں پیشرفت کا سلسلہ کل شب شروع کیا گیا تھا جو عراق کے مغربی صوبہ عنبر کا دارالخلافہ ہے۔ اس پیشرفت میں انسداد دہشت گردی فورس نے نمایاں رول ادا کیا جسے امریکی قیادت والی فضائی  حملوں سے بھی تقویت حاصل ہوئی۔ یہاں اس بات کا تذکرہ ضروری ہے کہ دولت اسلامیہ کا عراق کے چند اہم مستقروں سے قبضہ برخاست کردیا گیا۔بغداد سے موصولہ اطلاع کے بموجب عراق کے شمالی شہر موصل میں دولت اسلامیہ عراق وشام ‘داعش’ کے ممکنہ ٹھکانوں پر دو فضائی حملوں کے دوران کم ازکم 12 شہریوں سمیت 20 افراد ہلاک ہوگئے ہیں۔ علاقے میں موجود عینی شاہدین اور عراقی طبی عملے کے مطابق حملے میں قریبی عمارتوں کو بھی نقصان پہنچا ہے۔ عینی شاہدین کا کہنا تھا کہ دونوں فضائی حملے دس منٹ کے وقفے سے مقامی وقت کے مطابق دوپہر 3 بجے کے قریب ہوئے تھے جن میں داعش کے مقامی رہنما اور ان کے بیٹے کو نشانہ بنایا گیا تھا۔اس موقع پر کوئی سرکاری عہدیدار اس حملے پر موقف دینے کے لئے موجود نہیں تھا۔

TOPPOPULARRECENT