Monday , December 18 2017
Home / جرائم و حادثات / تین رکنی عادی سارقوں کے ہمراہ ایک شخص گرفتار

تین رکنی عادی سارقوں کے ہمراہ ایک شخص گرفتار

چاروں کے قبضہ سے 45 موبائیل فونس ضبط : اے سی پی گنگا ریڈی کی پریس کانفرنس
شمس آباد ۔ /19 جولائی (سیاست نیوز) شمس آباد آر جی آئی پولیس نے تین رکنی سارقوں کی ٹولی کے ہمراہ ایک موبائیل شاپ اونر کو گرفتار کرکے عدالتی تحویل میں بھیج دیا ۔ تفصیلات کے بموجب شمس آباد بس اسٹانڈ کے قریب واقع نیو گولڈن موبائیل دکان میں چند نامعلوم سارقین نے دکان کے پچھلے حصہ کی دیوار توڑ کر دکان میں داخل ہوئے اور قیمتی موبائیل فونس اور نقد رقم کا سرقہ کیا تھا ۔ دکان مالک کی شکایت پر پولیس نے مقدمہ درج کرتے ہوئے تحقیقات کا آغاز کرتے ہوئے نامعلوم سارقین کی تلاش شروع کردی ۔ کل شام تین افراد مشتبہ حالت میں موبائیل دکان کے اطراف گھوم رہے تھے انہیں شک کی بنا گرفتار کرتے ہوئے تفتیش کرنے پر تینوں نے اقبال جرم کرتے ہوئے تمام تفصیلات بتائی ۔انچارج اے سی پی گنگا ریڈی نے بتایا کہ فیاض اللہ خان 36 سالہ ساکن محمود نگر کالونی کشن باغ حیدرآباد جس کے خلاف چادر گھاٹ ، بیگم پیٹ ، چکڑپلی اور ایل بی نگر پولیس اسٹیشنوں میں سرقہ کے مقدمات درج ہے جو /5 جون کو ضمانت پر رہا ہوا تھا ۔ سید محبوب علی 33 سالہ ساکن چندرا نگر یاقوت پورہ جس کے خلاف دھوکہ دہی اور ڈکیتی کے مقدمات میر چوک ، رین بازار ، رام گوپال پیٹ اور عابڈس پولیس اسٹیشنوں میں مقدمات درج ہے جو /11 فبروری کو ضمانت پر رہا ہوا ۔ محمد عارف پاشاہ 30 سالہ ساکن حفیظ نگر یاقوت پورہ جس نے اس کی بیوی کا دوسرے مرد کے ساتھ ناجائز تعلقات رکھنے پر قتل کیا تھا جسے رین بازار پولیس نے گرفتار کرکے عدالتی تحویل میں دیدیا تھا جو /22 جون کو ضمانت پر رہا ہوا ۔ تینوں نے ہی جیل سے رہائی کے بعد پیسہ کمانے کیلئے آسان طریقہ سرقہ کرنے کیلئے ایک منصوبہ تیار کرتے ہوئے فیاض اللہ خان اور سید محبوب علی نے نلگنڈہ ٹاؤن I پولیس حدود میں ایک موبائیل شاپ میں سرقہ کرتے ہوئے فونس الیاس نامی شخص کو فروخت کردیئے جو مفرور ہے جس کے بعد تینوں نے ملکر /2 جولائی کی رات شمس آباد میں نیو گولڈن موبائیل شاپ میں سرقہ کرتے ہوئے موبائیل فونس اور 18 ہزار نقد رقم کا سرقہ کیا جن کے قبضہ سے 45 موبائیل فونس کو ضبط کرکے ان کے خلاف مقدمہ درج کرکے عدالتی تحویل میں بھیج دیا ۔ الیاس نامی شخص کی گرفتاری کیلئے ایک ٹیم تشکیل دی ہے ۔ اس موقع پر ایم مہیش انسپکٹر ، سرینواس اور رمیش نائک سب انسپکٹرس اور اسٹاف موجود تھے ۔

TOPPOPULARRECENT