Friday , January 19 2018
Home / Top Stories / تین طلاق پر قانون کسی کو پریشان کرنے کیلئے نہیں : نقوی

تین طلاق پر قانون کسی کو پریشان کرنے کیلئے نہیں : نقوی

خواتین کی حفاظت سب سے اہم‘’رن فار لاڈلی ‘ دوڑ کا افتتاح کرتے ہوئے مرکزی وزیر داخلہ کا خطاب
کشن گڑھباس( راجستھان)، 17 ڈسمبر (سیاست ڈاٹ کام) اقلیتی امور کے وزیر مختار عباس نقوی نے کہا ہے کہ تین طلاق پر قانون کسی کو پریشان کرنے کے لئے نہیں ہے ۔ مختار عباس نقوی آج راجستھان کے ضلع الور میں کشن گڑھ باس میں ساڑھے گیارہ ہزار کروڑ روپے کے چھ ترقیاتی منصوبوں کا سنگ بنیاد رکھنے کے موقع پر لوگوں سے خطاب کر رہے تھے ۔ انہوں نے کہا کہ تین طلاق کو قابل سزا جرم بنانے والا مجوزہ بل کسی کو پریشان کرنے کے لئے نہیں لایا جا رہا ہے بلکہ اس کا مقصد مسلم خواتین کو آئینی حق دلانے اور ان کے سماجی تحفظ کو یقینی بنانا ہے ۔ انھوں نے تین طلاق کو بڑا سماجی ظلم قرار دیتے ہوئے کہا کہ اس سے بہت طرح کے مسائل پیدا ہوتے ہیں جنہیں دور کرنا ضروری ہے ۔ مرکزی کابینہ نے وزیر اعظم نریندر مودی کی صدارت میں جمعہ کو منعقدہ میٹنگ میں تین طلاق کو قابل سزا جرم قرار دینے والے بل کو منظوری دے دی۔ مرکزی وزیر داخلہ راج ناتھ سنگھ نے خواتین کی حفاظت کو اہم بتاتے ہوئے کہا کہ یہ ایک طرح سے انسانیت کی حفاظت سے بھی بڑھکر ہے اس لئے اس پر سب سے پہلے توجہ دی جانی چاہئے ۔

راج ناتھ سنگھ نے ‘ خواتین کی حفاظت اور صنفی مساوات ‘کے تئیں لوگوں کو بیدار کرنے کے مقصدسے آج یہاں منعقد ددوڑ ‘رن فار لاڈلی ہاف میراتھن’ کو ہری جھنڈری دکھاکر روانہ کرنے کے موقع پر یہ بات کہی ۔اس دوڑ کا انعقاد دہلی پولیس اور غیر سرکاری تنظیم لاڈلی فاؤنڈیشن نے مل کر کیا۔ اس میں ہزاروں کی تعداد میں اسکول اور کالج کے طالب علم، ملٹی نیشنل کمپنیوں کے ملازمین اور پیشہ ور رنر شامل ہوئے ۔ لاڈلي فاؤنڈیشن نے اگلے پانچ سال میں ملک میں ایک کروڑ ‘لاڈلی رکشک’ تعینات کرنے کا ہدف رکھا ہے ۔راج ناتھ سنگھ نے ملک میں خواتین کے تئیں نظریہ میں تبدیلی کی ضرورت پر زور دیتے ہوئے کہا کہ خواتین سماج کی مضبوط بنیاد ہیں اور وہ جتنی مضبوط ہوں گی سماج کی بنیاد بھی اتنی ہی طاقت ور بنے گی۔خواتین کے تئیں عزت و احترام کا جذبہ پیدا کرنے کے لئے اسے تعلیم میں شامل کیا جانا چاہئے ۔انہوں نے اس سمت میں لاڈلی فاؤنڈیشن کی کوششوں کی ستائش کی۔جاری۔یواین آئی۔اے ایم۔اس موقع پر موجود دہلی پولیس ڈپٹی کمشنر امولیے پٹنائک نے کہا کہ خواتین کے خلاف جرائم کو روکنا پولیس کی سب سے بڑی ذمہ داری اور فکرمندی ہے ۔خواتین کی حفاظت کے تئیں بیداری بہت اہمیت رکھتی ہے ۔ایسے پروگرام کا انعقاد ہوتا رہنا چاہئے ۔جواہر لال نہرو اسٹیڈیم سے شروع ہونے والی دوڑ کناٹ پلیس کے سنٹرل پارک میں ختم ہوئی۔دوڑ میں شامل لوگوں کو خواتین کے خلاف جرائم کو ہر حال میں وکنے میں مدد کرنے کے لئے ‘لاڈلی رکشک’ بننے کا عزم دلایاگیا۔

TOPPOPULARRECENT