Thursday , November 23 2017
Home / Top Stories / تین لاکھ بدحال روہنگیا مسلمان بنگلہ دیش پہونچ گئے

تین لاکھ بدحال روہنگیا مسلمان بنگلہ دیش پہونچ گئے

مائنمار میں فوج کے مظالم ، قتل ، غارت گری ، عصمت ریزی اور آتشزنی کی دلخراش داستانیں ، سرحد پر کھلے آسمان تلے زندگی

کاکس بازار (بنگلہ دیش) /9 ستمبر (سیاست ڈاٹ کام) اقوام متحدہ نے آج کہا کہ مائنمار میں تشدد کی نئی لہر پھوٹ پڑنے کے بعد گزشتہ 15 دن کے دوران تقریباً 300,000 روہنگیا مسلمان اپنی جان بچانے کیلئے ریاست رکھائین سے فرار ہوکر بنگلہ دیش پہونچ گئے ہیں ۔ اس تعداد میں یومیہ 20,000 کا اضافہ ہورہا ہے ۔ اقوام متحدہ کے پناہ گزین ادارہ کے ترجمان جوزف تریپورہ نے کہا کہ ’’ /25 اگست کے بعد تقریباً 2,90,000 روہنگیا مسلمان وہاں سے فرار ہوکر بنگلہ دیش میں پناہ لے چکے ہیں ‘‘ ۔ عہدیداروں نے کہا کہ اقوام متحدہ کو بعض ایسے دیہاتوں اور علاقوں میں بھی روہنگیا مسلمانوں کی موجودگی کا پتہ چلا ہے جو علاقہ پہلے امدادی ایجنسیوں کی طرف سے شامل نہیں کئے گئے تھے ۔ اکثر پناہ گزیں ناہموار راستوں سے پیدل چلتے ہوئے یا پھر کشتیوں کے ذریعہ بنگلہ دیش میں داخل ہوئے ہیں جبکہ ان میں سے ایک چوتھائی تعداد تیراکی کے ذریعہ دریائے ناف کا کنارہ عبور کرتے ہوئے پڑوسی ملک پہونچی ہے ۔

اقوام متحدہ نے کہا کہ پریشان حال پناہ گزینوں کی آمد میں چہارشنبہ کو بھاری اضافہ ہوا جب بے یارومددگار روہنگیا مسلم مرد خواتین اور بچوں سے کھچا کھچ بھری 300 کشتیاں ساحل پہونچیں ۔ اقوام متحدہ نے جمعرات کو بنگلہ دیش پہونچنے والے پناہ گزینوں کی تعداد 1,64,000 بتایا تھا ۔ بدھ مت کے ماننے والوں کے اکثریتی ملک مائنمار میں روہنگیا مسلمانوں کو ایک طویل عرصہ سے نفرت ، تعصب و امتیازی سلوک کا نشانہ بنایا جاتا رہا ہے حتی کہ انہیں اس ملک کی شہریت کے علاوہ تعلیم ، روزگار ، کاروبار اور حتی کہ آزادانہ نقل و حرکت کے جیسے بنیادی انسانی حقوق سے بھی محروم رکھا گیا ہے ۔ نیز روہنگیا مسلمانوں کی غالب آبادی والے علاقے گزشتہ کئی دہائیوں سے فوج اور سکیورٹی فورسیس کی ناکہ بندی میں ہیں چنانچہ بدترین غربت ، ناخواندگی اور افلاس سے متاثرہ یہ مسلمان اپنی زندگی کی گزربسر کیلئے اپنے علاقہ سے باہر نکل کر کسی دوسرے علاقہ میں محنت مزدوری بھی نہیں کرسکتے ۔ مائنمار کی حکومت ان روہنگیا مسلمانوں کو بنگلہ دیش کے غیرقانونی مہاجرین تصور کرتی ہے ۔

جماعت اسلامی کی مرکز سے اپیل
نئی دہلی ، 9 ستمبر (سیاست ڈاٹ کام) جماعت اسلامی ہند نے آج حکومت ہند سے اپیل کی کہ روہنگیا مسلمانوں کو مائنمار میں ان کے دستوری اور شہریت کے حقوق بحال ہونے تک ملک میں رہنے کی اجازت دی جائے۔
راجناتھ کی 20 وفود سے ملاقات
٭ سرینگر : مرکزی وزیر داخلہ راجناتھ سنگھ نے ہفتہ کو جموں و کشمیر میں اپنے چار روزہ دورے کے پہلے دن مختلف شعبوں بشمول شکارا اینڈ ہاؤس بوٹ اسوسی ایشن کے زائد از 20 وفود سے ملاقات کی اور ان کے مسائل معلوم کئے۔
٭ پونچھ: پاکستان نے لائن آف کنٹرول کے قریب جموں و کشمیر کے ضلع پونچھ میں سرحدی چوکیوں پر بلااشتعال فائرنگ کے ذریعہ ہفتہ کو سرحد پر جنگ بندی کی خلاف ورزی کی ۔
٭ نئی دہلی : ہندوستان اور پاکستان کے درمیان ہائیڈو الیکٹرک پراجکٹس کے بارے میں بات چیت کا دوسرا دور واشنگٹن میں 14، 15 ستمبر کو ورلڈ بینک کی سرپرستی میں منعقد ہوگا۔
٭ نئی دہلی : جواہرلعل نہرو یونیورسٹی اسٹوڈنٹس یونین کے سنٹرل پیانل کیلئے منعقدہ الیکشن میں ڈالے گئے 65% ووٹوں کی گنتی ہوچکی، جس میں یونائیٹیڈ۔ لیفٹ نے تمام چار کلیدی عہدوں کیلئے سبقت حاصل کرلی اور اے بی وی پی تیسری پوزیشن پر چلی گئی ہے۔
٭ چینائی : آسٹریلیا کی کرکٹ ٹیم کا دوسرا بیاچ بشمول کپتان اسٹیو اسمتھ آج رات یہاں پہنچ گیا۔ مہمانوں کی انڈیا کے خلاف پانچ میچ کی ونڈے سیریز 17 ستمبر کو شروع ہوگی۔

 

Top Stories

TOPPOPULARRECENT