Saturday , September 22 2018
Home / Ads Others / ت8-تا 15 جنوری کو حج 2018 کے لیے مختلف ریاستوں کی قرعہ اندازی

ت8-تا 15 جنوری کو حج 2018 کے لیے مختلف ریاستوں کی قرعہ اندازی

تا8 ات15 جنوری کو حج 2018 کے لیے مختلف ریاستوں کی قرعہ اندازی
چیف ایگزیکٹیو آفیسر سنٹرل حج کمیٹی ڈاکٹر مقصود احمد خاں اور ڈپٹی چیف ایگزیکٹیو آفیسر فضل صدیقی کی پروفیسر ایس اے شکور سے ملاقات
حیدرآباد 18 ڈسمبر (سیاست نیوز) چیف ایگزیکٹیو آفیسر سنٹرل حج کمیٹی ڈاکٹر مقصود احمد خان اور ڈپٹی چیف ایگزیکٹیو آفیسر فضل صدیقی نے آج تلنگانہ حج کمیٹی کے اسپیشل آفیسر پروفیسر ایس اے شکور سے ملاقات کی اور حج 2018 ء انتظامات پر بات چیت کی۔ ڈاکٹر مقصود احمد خاں حیدرآباد میں ایک سمینار میں شرکت کے لئے پہونچے ہیں۔ سمینار کا مقصد عازمین حج کو مختلف بیماریوں سے بچاؤ کے اقدامات کرنا ہے۔ ورلڈ ہیلت آرگنائزیشن اور دیگر تنظیموں نے اِس کا اہتمام کیا تاکہ عازمین حج میں شعور بیدار کیا جاسکے۔ روانگی سے قبل عازمین کی مکمل طبی جانچ کو یقینی بنایا جائے گا تاکہ سعودی حکام کو دشواری نہ ہو۔ بتایا جاتا ہے کہ گزشتہ سال ٹی بی کے کئی مریض عازمین میں پائے گئے۔ اِس کے علاوہ 7 حاملہ خواتین بھی حج کے لئے روانہ ہوئیں جبکہ قواعد کے مطابق یہ ممکن نہیں ہے۔ پروفیسر ایس اے شکور نے تلنگانہ حج کمیٹی کی جانب سے کئے جارہے انتظامات کی تفصیلات بیان کی اور کہاکہ تلنگانہ کے علاوہ آندھراپردیش اور کرناٹک کے 5 اضلاع کے عازمین حیدرآباد سے روانہ ہوتے ہیں۔ ڈاکٹر مقصود احمد خاں نے کہاکہ حج 2018 ء کے لئے ابھی تک 3 لاکھ 37 ہزار درخواست فارم داخل کئے گئے۔ گزشتہ سال کے مطابق جاریہ سال بھی ہندوستان کا حج کوٹہ 1,70,000 رہے گا۔ سنٹرل حج کمیٹی کو ایک لاکھ 25 ہزار اور خانگی ٹور آپریٹرس کو 45 ہزار عازمین کا کوٹہ الاٹ کیا جائے گا۔ اُنھوں نے کہاکہ 8 تا 15 جنوری مختلف ریاستوں کی قرعہ اندازی کا انتظام کیا جارہا ہے۔ پروفیسر ایس اے شکور نے بتایا کہ تلنگانہ حج کمیٹی کو 14 ہزار سے زائد درخواستیں وصول ہوئی ہیں اور 22 ڈسمبر تک یہ تعداد 17 تا 18 ہزار تک پہونچ سکتی ہے۔ چیف ایگزیکٹیو آفیسر سنٹرل حج کمیٹی نے حیدرآباد میں کئے جانے والے انتظامات کی ستائش کی اور مکمل تعاون کا یقین دلایا۔

TOPPOPULARRECENT