Saturday , January 20 2018
Home / کھیل کی خبریں / جئے وردھنے کے 17 سالہ ٹسٹ کیریئر کا آخری مقابلہ باقی

جئے وردھنے کے 17 سالہ ٹسٹ کیریئر کا آخری مقابلہ باقی

کولمبو ۔ 12 اگست (سیاست ڈاٹ کام) سری لنکا کرکٹ ٹیم کے سابق کپتان اور سینئر بیٹسمین مہیلا جئے وردھنے اپنے وداعی مقابلے میں شرکت کرتے ہوئے 17 سالہ ٹسٹ کیریئر کا شاندار اختتام کریں گے جیسا کہ پاکستان کے خلاف کولمبو میں جمعرات کو شروع ہونے والے سیریز دوسرے اور آخری مقابلہ میں جئے وردھنے ٹسٹ کرکٹ میں اپنا آخری مقابلہ کھیلیں گے۔ شاندار بیٹ

کولمبو ۔ 12 اگست (سیاست ڈاٹ کام) سری لنکا کرکٹ ٹیم کے سابق کپتان اور سینئر بیٹسمین مہیلا جئے وردھنے اپنے وداعی مقابلے میں شرکت کرتے ہوئے 17 سالہ ٹسٹ کیریئر کا شاندار اختتام کریں گے جیسا کہ پاکستان کے خلاف کولمبو میں جمعرات کو شروع ہونے والے سیریز دوسرے اور آخری مقابلہ میں جئے وردھنے ٹسٹ کرکٹ میں اپنا آخری مقابلہ کھیلیں گے۔ شاندار بیٹنگ اور دلکش اسٹروکس کیلئے عالمی شہرت یافتہ جئے وردھنے نے اپریل میں منعقدہ آئی سی سی ٹوئنٹی 20 ورلڈ میں ٹیم کے عالمی چمپیئن بننے کے بعد مختصر طرز کی کرکٹ سے کنارہ کشی اختیار کرلی ہے اور اب پاکستان کے خلاف وہ اپنے کیریئر کا آخری مقابلہ کھیلیں گے۔ اس طرح وہ طویل طرز کی کرکٹ کو بھی خیرباد کہہ رہے ہیں۔ تاہم انہوں نے 50 اوورس کی کرکٹ میں ورلڈکپ 2015ء تک ٹیم کی نمائندگی کا ارادہ ظاہر کیا ہے جیسا کہ یہ ورلڈ کپ آسٹریلیا اور نیوزی لینڈ میں مشترکہ طور پر کھیلا جارہا ہے۔

جئے وردھنے دنیا کے ان 5 کھلاڑیوں میں شامل ہیں جو کہ ٹسٹ اور ونڈے کرکٹ میں 11 ہزار سے زائد رنز اسکور کئے ہیں۔ یہ فہرست سچن تنڈولکر، رکی پونٹنگ، جیک کیالیس اور کمارا سنگاکارا پر مشتمل ہے۔ جئے وردھنے نے اپنے 17 سالہ ٹسٹ کیریئر میں 148 ٹسٹ میں تاحال 50.02 کی اوسط سے رنز اسکور کئے ہیں جس میں 34 سنچریاں بھی شامل ہیں لیکن سیدھے ہاتھ کے بیٹسمین ایشیاء سے باہر بہتر مظاہروں میں استقلال کا ثبوت نہیں دے پائے ہیں۔ ان کے کیریئر کا اعظم ترین اسکور 374 رنز ہے اور اس اننگز کے دوران انہوں نے کمارا سنگاکارا (287) کے ہمراہ عالمی ریکارڈ 624 رنز کی پارٹنر شپ جنوبی افریقہ کے خلاف قائم کی ہے۔ یہ مقابلہ کولمبو کے سنہا لیسی اسپورٹس کلب (ایس ایس سی) میں 2006ء میں کھیلا گیا تھا اور اس مقابلہ کے دوران جئے وردھنے نے ڈیل اسٹین کے علاوہ مکھیا این تینی جیسے عالمی معیار کے فاسٹ بولروں پر مشتمل جنوبی افریقی بولنگ شعبہ کا ڈٹ کر مقابلہ کیا تھا۔ اس مقابلہ کے دوران شائقین کو امید تھی کہ جئے وردھنے ویسٹ انڈیز کے سابق کپتان اور عظیم کھلاڑی برائن لارا کے ناقابل تنقید 400 رنز ریکارڈ توڑ دیں گے۔ اس مقابلہ میں سری لنکائی ٹیم کو ایک اننگز اور 153 رنز کی شاندار کامیابی حاصل ہوئی تھی۔ 1997ء میں جب سری لنکائی ٹیم ہندوستان کے خلاف 952/6 پر اپنی ریکارڈ اننگز ڈکلیر کی تھی، اس مقابلہ میں جئے وردھنے نے اپنے ٹسٹ کیریئر کا نہ صرف آغاز کیا تھا بلکہ سنت جئے سوریا کے 340 رنز اور روشن ماہنامہ کے 225 رنز کے علاوہ خود بھی 66 رنز کی بہترین اننگز کھیلتے ہوئے ایک بڑے کھلاڑی کا اشارہ دیا تھا۔

ابتداء میں جئے وردھنے کا وداعی مقابلہ کولمبو کے پی سارا اوول میدان میں منعقد شدنی تھا لیکن عہدیداروں نے درخواست کو قبول کرتے ہوئے بورڈ نے اسے جئے وردھنے کے پسندیدہ میدان ایس ایس سی پر منتقل کردیا ہے۔ ایس ایس سی میدان پر جئے وردھنے نے 26 ٹسٹ مقابلوں میں 2863 رنز 77.37 کی اوسط سے اسکور کئے ہیں جس میں 11 سنچریاں اور 8 نصف سنچریاں ہیں۔ کسی بھی میدان پر سب سے زیادہ رنز بنانے کا اعزاز بھی جئے وردھنے کو ایس ایس سی میدان پر حاصل ہے۔ گذشتہ ماہ جنوبی افریقہ کے خلاف بھی انہوں نے یہاں 165 رنز کی شاندار اننگز کھیلی ہے۔ دریں اثناء جئے وردھنے کا کہنا ہیکہ یہ ان کیلئے بڑا اعزاز اور وقار کی بات ہیکہ 17 برس تک ملک کی نمائندگی کی ہے۔ جئے وردھنے نے سبکدوشی کے فیصلہ کو سخت فیصلہ قرار دیتے ہوئے کہا کہ یہ صحیح وقت ہیکہ ٹسٹ کرکٹ کو خیرباد کہیں۔

TOPPOPULARRECENT