Tuesday , November 20 2018
Home / شہر کی خبریں / جاریہ سال دسمبر میں عام انتخابات کی پیش قیاسی

جاریہ سال دسمبر میں عام انتخابات کی پیش قیاسی

انتخابات کے لیے تیار رہنے کانگریس قائدین کو مشورہ ، عنقریب بس یاترا ، اتم کمار ریڈی
حیدرآباد ۔ 22 ۔ جنوری : ( سیاست نیوز ) : صدر تلنگانہ پردیش کانگریس کمیٹی اتم کمار ریڈی نے دسمبر میں عام انتخابات کی پیش قیاسی کرتے ہوئے انتخابات کے لیے تیار ہوجانے کا پارٹی کیڈر کو مشورہ دیا ۔ فروری سے بس یاترا شروع کرنے کا اعلان کیا ۔ جنوبی تلنگانہ میں کانگریس کے کلین سوئیپ کا دعویٰ کیا ۔ آج ابراہیم پٹنم منڈل ضلع رنگاریڈی کے سینکڑوں تلگو دیشم کارکنوں نے صدر ضلع کانگریس کمیٹی کے ملیش کی قیادت میں گاندھی بھون پہونچ کر کانگریس میں شمولیت اختیار کی ۔ اس موقع پر خطاب کرتے ہوئے صدر تلنگانہ پردیش کانگریس کمیٹی اتم کمار ریڈی نے کہا کہ ٹی آر ایس کی الٹی گنتی شروع ہوچکی ہے ۔ جاریہ سال دسمبر میں عام انتخابات منعقد ہونے کے آثار پیدا ہوگئے ہیں ۔ انہوں نے پارٹی کیڈر کو انتخابات کا سامنا کرنے کے لیے تیار ہوجانے کا مشورہ دیتے ہوئے کہا کہ کانگریس کے اصولوں سے اتفاق کرتے ہوئے دوسری جماعتوں کے قائدین اور کارکن بھاری تعداد میں ٹی آر ایس میں شامل ہورہے ہیں ۔ بہت جلد مزید بڑے قائدین کانگریس میں شامل ہوں گے ۔ حکمران ٹی آر ایس کے بشمول دوسری جماعتوں کے قائدین کانگریس سے رابطے میں ہیں ۔ تیزی سے کانگریس پارٹی عوامی تائید بٹور رہی ہے اور ٹی آر ایس کا گراف دن بہ دن گرتے جارہا ہے ۔ ریاست میں کوئی بھی طبقہ حکومت کی کارکردگی سے مطمئن نہیں ہے کیوں کہ اقتدار حاصل کرنے کے لیے کے سی آر نے سماج کے تمام طبقات کو دھوکہ دیا ہے جو بھی وعدے کئے گئے ان میں سے ایک وعدے کو بھی پورا نہیں کیا گیا ۔ عوام میں حکومت کے خلاف ناراضگی بڑھ رہی ہے اور ٹی آر ایس کے حقیقی کارکن بھی حکومت سے مایوس ہے ۔ کانگریس پارٹی کو تنظیمی سطح پر مستحکم کرنے کے لیے بوتھ سطح سے ریاستی سطح تک کمیٹیاں تشکیل دینے کا عمل بہت جلد مکمل ہوجائے گا ۔ آئندہ ماہ فروری سے کانگریس کے کیڈر میں جوش و خروش بھرنے کے لیے بس یاترا کا آغاز کیا جارہا ہے ۔ بجٹ سیشن کے بعد بھی بس یاترا جاری رہے گی ۔ 2 جون کو بہت بڑا جلسہ عام منعقد کیا جائے گا ۔ جس میں کانگریس کے صدر راہول گاندھی کو مدعو کیا جائے گا ۔ ٹی آر ایس حکومت کے 4 سالہ دور حکومت کی ناکامیوں کو آشکار کیا جائے گا ۔ اتم کمار ریڈی نے کہا کہ تلنگانہ میں حکمرانوں کی ہٹ دھرمی بڑھ گئی ہے ۔ حکومت پانی کے لیے نہیں بلکہ کمیشن کے لیے مشین بھگیرتا اور مشین کاکتیہ اسکیمات پر عمل آوری کررہی ہے ۔ جس میں بڑے پیمانے پر بے قاعدگیاں ہورہی ہیں ۔ پسماندہ طبقات پر ظلم و زیادتی بڑھ گئی ہے ۔ انہوں نے کہا کہ اگر اب انتخابات منعقد کرائے جاتے ہیں تو کانگریس پارٹی آسانی سے 70 اسمبلی حلقوں پر کامیابی حاصل کرے گی ۔ صدر تلنگانہ پردیش کانگریس کمیٹی نے کہا کہ جس طرح پسماندہ طبقات کے لیے محفوظ اسمبلی حلقوں کے لیے خصوصی حکمت عملی تیار کرتے ہوئے انتخابی مہم چلائی جارہی ہے اس طرح دوسرے حلقوں پر بھی توجہ دی جارہی ہے ۔۔

Top Stories

TOPPOPULARRECENT