Thursday , December 13 2018

جاریہ ماہ اے پی میں تلگودیشم و بی جے پی کا اتحاد ختم ہوگا

چندرا بابو نائیڈو پر نریندر مودی کی ناراضگی ، تلگودیشم ایم پی جے سی دیواکر ریڈی کا انکشاف
حیدرآباد /7 مارچ ( سیاست نیوز ) ریاست آندھراپردیش میں بی جے پی کے ساتھ تلگودیشم پارٹی کی انتخابی مفاہمت و دوستی کے مسئلہ پر تلگودیشم پارٹی کے رکن پارلیمان اننت پور حلقہ لوک سبھا مسٹر جے سی دیواکر ریڈی نے سنسنی خیز ریماکس کیا ۔ آج دہلی میں اخباری نمائندوں سے غیر رسمی بات چیت کرتے ہوئے مسٹر جے سی دیواکر ریڈی نے سخت الفاظ میں کہا کہ جاریہ ماہ کے اختتام سے قبل ہی بی جے پی کے ساتھ تعلقات کو ختم کردئے جانے کا قوی امکان ہے ۔ وزیر اعظم مسٹر نریندر مودی اے پی پر کافی برہم ہیں ۔ رکن پارلیمان حلقہ لوک سبھا اننت پور تلگودیشم نے کہا کہ پارلیمنٹ کے اندر اور پارلیمنٹ کے باہر احتجاج و جدوجہد بڑے پیمانے پر ارکان پارلیمان تلگودیشم پارٹی جاری رکھے ہوئے ہیں ۔ اس صورتحال کے پیش نظر آندھراپردیش کے عوام نے جس طرح گذشتہ انتخابات کے موقع پر کانگریس پارٹی پر اپنے غصہ و برہمی کا اظہار کیا تھا اسی طرح ریاستی عوام اب بی جے پی پر اپنے شدید غصہ و برہمی کا اظہار کریں گے ۔ انہوں نے وائی ایس آر کانگریس پارٹی کو تنقید کا نشانہ بناتے ہوئے کہا کہ ریاست کے عوام کو دھوکہ دینے کیلئے وائی ایس جگن موہن ریڈی تحریک عدم اعتماد پیش کرنے کیلئے کوشاں ہیں ۔

TOPPOPULARRECENT