Monday , November 20 2017
Home / Top Stories / جاسٹا کے استعمال کیخلاف امریکہ کو سعودی عرب کا انتباہ

جاسٹا کے استعمال کیخلاف امریکہ کو سعودی عرب کا انتباہ

ایران پر دہشت گردوں کی حمایت کا الزام ، داؤس میں سعودی وزیر خارجہ کا خطاب
داؤس ۔ 18 جنوری (سیاست ڈاٹ کام) سعودی عرب کے وزیر خارجہ عادل الجبیرنے کہا ہے کہ اگر امریکہ نے ”انصاف برخلاف اسپانسرز دہشت گردی ایکٹ” ( جاسٹا) پر عمل درآمد کیا تو وہ خود خسارے میں رہے گا اور دنیا میں اس کے مفادات کو نقصان پہنچے گا۔وہ سوئٹزرلینڈ کے شہر ڈاؤس میں منعقدہ سالانہ عالمی اقتصادی فورم میں گفتگو کررہے تھے۔انھوں نے سعودی عرب اور امریکہ کے درمیان تعلقات ،جاسٹا ،دہشت گردی کے خلاف جنگ ،مشرق وسطیٰ کی تازہ صورت حال اور ایران کی خطے میں مداخلت کے حوالے سے مختصر مگر جامع گفتگو کی ہے۔انھوں نے خبردار کیا ہے کہ اگر جاسٹا قانون کے تحت (ملکوں کے) خودمختارانہ استثنیٰ کو نظرانداز کیا گیا تو اس سے تقریباً ہر ملک میں امریکہ کے خلاف قانونی چارہ جوئیوں کا دروازہ کھل جائے گا۔تاہم انھوں نے اُمید ظاہر کی ہے کہ امریکی کانگریس جاسٹا پر نظرثانی کرے گی اوراس کی تصریحات پر موجودہ شکل میں عمل درآمد کی اجازت نہیں دے گی۔سعودی وزیر خارجہ نے مشرق وسطیٰ کی تازہ صورت حال کے حوالے سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ ایران خطے میں دہشت گردی کی حمایت کررہا ہے اور اس کو برآمد کررہا ہے۔انھوں نے کہا کہ سخت گیر جنگجو گروپ داعش اور القاعدہ کے خلاف تمام ممالک جنگ آزما ہیں جبکہ ایران کے ان تنظیموں کے ساتھ روابط استوار ہیں۔انھوں نے سوال اٹھایا کہ داعش اور القاعدہ نے اپنے راستے میں آنے والے دنیا کے قریباً سبھی ملکوں کو اپنی دہشت گردی کا نشانہ بنایا ہے لیکن ان تنظیموں کے جنگجوؤں نے آج تک ایران کے مفادات کے خلاف کوئی حملہ نہیں کیا ہے۔

TOPPOPULARRECENT