Tuesday , December 11 2018

جامعہ نظامیہ اور سیاست کے زیر اہتمام دینی گرمائی کورس

نونہالان ملت اور نوجوانوں کو بنیادی دینی تعلیم کی شدید ضرورت‘ مفکر اسلام مفتی خلیل احمد اور جناب زاہد علی خان کا بیان

نونہالان ملت اور نوجوانوں کو بنیادی دینی تعلیم کی شدید ضرورت‘ مفکر اسلام مفتی خلیل احمد اور جناب زاہد علی خان کا بیان
حیدرآباد ۔ 20 ۔ اپریل : ( پریس نوٹ ) : اس الحاد و بے دینی کے پرآشوب دور میں جب کہ نئی نسل دین اسلام کے بنیادی مسائل سے ناواقفیت کی بناء عصر حاضر کے فتنہ اور شر انگیزیوں کی شکار ہو رہی ہے اس لئے ضروری ہے کہ نئی نسل کو اسلام کی حقانیت اور دین اسلام کے بنیادی مسائل سے واقفیت کروائی جائے ۔ اس لئے علوم اسلامیہ کی عظیم دینی درسگاہ جامعہ نظامیہ اور روزنامہ سیاست کے زیر اہتمام 2003 سے انگلش میڈیم کے طلبہ کے لئے گرمائی تعطیلات میں بنیادی دینی تعلیم کا مدارس میں 40 روزہ گرمائی کورس کا انتظام کیا جا رہا ہے ۔ چنانچہ سال حال بھی ان مراکز کے قیام کے لئے روزنامہ سیاست میں جامعہ نظامیہ کے شیخ الجامعہ مفکر اسلام مفتی خلیل احمد ‘ مولوی سید احمد علی قادری ‘ معتمد جامعہ نظامیہ اور مولانا حافظ محمد عبید اللہ فہیم قادری الملتانی منتظم جامعہ نظامیہ جناب زاہد علی خان مدیر سیاست ‘ جناب میر عامر علی خاں نیوز ایڈیٹر روزنامہ سیاست ‘جناب میر شجاعت علی جنرل منیجر روزنامہ سیاست کی ایک مشاورتی اجلاس منعقد ہوا ، جس میں طے پایا کہ سال حال بھی 26؍ اپریل 2015 ء سے جامعہ نظامیہ اور روزنامہ سیاست کے اشتراک سے حسب سابق گرمائی تعطیلات میں انگلش میڈیم کے مدارس میں 3-30 بجے دن تا5-30 بجے دن بنیادی دینی تعلیم کا انتظام کیا جائے ، کلاسیس 3؍ جون تک جاری رہیں گے اور 4 جون کو امتحان ہوگا۔ مفکر اسلام مفتی خلیل احمد نے بتایا کہ موجودہ دور میں نئی نسل کو علم دین سے واقف کروانے کی شدید ضرورت ہے تاکہ وہ عصر حاضر کے فتنہ انگیزیوں سے محفوظ رہیں ۔ مولانا نے والدین کو مشورہ دیا کہ وہ اپنے بچوں کو بنیادی دینی تعلیم سے واقف کروائیں تاکہ ان کے ذہن دین اسلام اور اللہ و رسول کی محبت سے معمورہوں۔ قرآن و حدیث سے انہیں واقفیت ہو ۔ آج نوجوانوں میں ادب و احترام ‘ فرائض کی ادائیگی ‘ ماں باپ کی تعظیم و تکریم ‘ عفت و پاکدامنی ‘ پڑوسیوں کے حقوق ‘ سماجی شعور‘ اخوت روادری کی تعلیمات سے دوری پیدا ہوگئی ہے ۔ ان کا انسداد اخلاقی و دینی تعلیم کے ذریعہ ہی کیا جاسکتا ہے ۔ جناب میر زاہد علی خان نے کہا کہ عصری تعلیم کے ساتھ دینی تعلیم بے حد ضروری ہے اس جانب والدین توجہ کریں اور یہ لازم کرلیں کہ پہلے اپنے بچوں کو دینی تعلیم سے آراستہ کرنے کے بعد عصری تعلیم کی طرف توجہ کریں گے۔ ورنہ ہمارے نوجوانوں میں دین سے دوری اور بیزارگی پیدا ہوجائیگی ۔ انگریزی تعلیم اور یوروپی طرز حیات اپنا کر ہمارے نوجوان شعوری یا غیر شعوری طور پر بے دین ہوگئے ہیں ۔ انہیں نہ اپنی تہذیب و تمدن کا خیال ہے اور نہ دین اسلام کا پاس و لحاظ ۔ اس لئے والدین کی اہم ذمہ داری ہے کہ وہ اپنے بچوں کی ذہنی نشو ونما ‘ اسلامی افکار اور قرآن و حدیث کی روشنی میں کریں ۔ اس کے لئے ضروری ہے کہ وہ بنیادی دینی تعلیم سے آراستہ کریں ۔ روزنامہ سیاست اور جامعہ نظامیہ کی کوشش سے 2003 ء سے بنیادی دینی تعلیمی گرمائی کورس کا آغاز کیا گیا ۔ الحمد للہ یہ تیراہواں سال ہے ۔ ریاست کے علاوہ بیرون ریاست کرناٹک ‘ مہاراشٹرا میں بھی مراکز قائم کئے جا رہے ہیں ۔ اشاعت علم دین کے خواہشمند ملت کے درد مند اور عصری تعلیم کے مدارس کے ذمہ دار اصحاب جو خصوصی گرمائی دینی جماعتوں کا نظم اپنے مدارس میں کرنا چاہتے ہیں اپنی مطبوعہ لیٹر پیاڈ پر ایک درخواست حضرت شیخ الجامعہ ‘جامعہ نظامیہ کے نام تحریر کر کے پیش کریں ۔ درخواستیں جامعہ نظامیہ کے فیاکس : 040-24503267 اور روزنامہ سیاست کے فیاکس نمبر 040-24010379 پر بھی روانہ کئے جاسکتے ہیں۔ منتظمین جامعہ نظامیہ اور سیاست کے دفتر پر راست درخواستیں بھی جمع کرواسکتے ہیں ۔ گرمائی کلاسیس کے باضابطہ نظم کو برقرار رکھنے لئے معلم اور ضروری کتابیں جامعہ نظامیہ اور روزنامہ سیاست کی جانب سے فراہم کئے جائیں گے ۔ گرمائی دینی کلاسیس کے لئے جو نصاب تیار کیا گیا ہے اپنی نوعیت کا جامع اور مفید کورس ہے ۔ جس میں قرآن مجید ‘ حدیث نبی صلی اللہ علیہ وسلم ‘ نماز ‘ وضو ‘ غسل اور طہارت کے بنیادی مسائل ‘ حلال ‘ و حرام کی تمیز ‘ والدین سے حسن سلوک ‘ معلمین و معلمات کا ادب و احترام ‘ رشتہ داروں اور ہمسایہ کے حقوق ‘ سخاوت اخلاق و کردار جیسے امور شامل ہیں ۔ درخواستیں 23؍اپریل تک درخواستیں روانہ کی جاسکتی ہیں ۔ سنٹرس کے منظمین کو صرف صفائی جگہ اور موسم گرما کے پیش نظر صاف پانی کا نظم رکھنا ہوگا ۔ تفصیلات کیلئے فون نمبر : 9849071327 پر ربط کریں ۔

TOPPOPULARRECENT