Sunday , September 23 2018
Home / شہر کی خبریں / جامعہ نظامیہ میں آڈیٹوریم کی تعمیر میں تیزی پیدا کرنے کی ہدایت

جامعہ نظامیہ میں آڈیٹوریم کی تعمیر میں تیزی پیدا کرنے کی ہدایت

کام میں پہلوتہی پر کنٹراکٹر کو انتباہ، چیرمین تلنگانہ وقف بورڈ محمد سلیم کا دورہ

حیدرآباد۔ 13جنوری (سیاست نیوز) صدرنشین وقف بورڈ محمد سلیم نے آج جامعہ نظامیہ کا دورہ کرتے ہوئے آڈیٹوریم کی تعمیر کے کاموں کا جائزہ لیا۔ انہوں نے تعمیری کاموں کی سست رفتاری پر ناراضگی جتائی اور انتباہ دیا کہ اگر مقررہ مدت کے دوران کام مکمل نہیں کیا گیا تو کنٹراکٹر پر جرمانہ عائد کیا جائے گا۔ محمد سلیم نے کہا کہ فروری میں بانیٔ جامعہ نظامیہ حضرت انواراللہ فاروقیؒ کے عرس کے موقع پر نظامیہ کے سالانہ جلسہ میں چیف منسٹر کی شرکت متوقع ہے اور اس موقع پر چیف منسٹر آڈیٹوریم کا افتتاح کرنا چاہتے ہیں۔ لیکن موجودہ کام کی رفتار کے اعتبار سے فروری میں تکمیل ممکن نظر نہیں آتی۔ انہوں نے آر اینڈ بی کے عہدیداروں کو ہدایت دی کہ لیبر کی تعداد میں اضافہ کرتے ہوئے جلد از جلد آڈیٹوریم کا کام مکمل کریں۔ دورہ کے موقع پر شیخ الجامعہ مفتی خلیل احمد، چیف ایگزیکٹیو آفیسر وقف بورڈ منان فاروقی، آر اینڈ بی کے عہدیدار اور جامعہ نظامیہ کے ذمہ دار موجود تھے۔ معائنہ کے دوران پتہ چلا کہ کئی اہم کام ابھی باقی ہیں اور تیزی سے کام کی تکمیل کی صورت میں مزید تین ماہ درکار ہوں گے۔ صدرنشین وقف بورڈ نے کہا کہ آر اینڈ بی اور کنٹراکٹر پر واضح کردیا گیا تھا کہ فروری تک کام مکمل کردیں لیکن اس پر عمل درآمد نہیں ہوا ہے۔ محمد سلیم نے کہا کہ بہت جلد آر اینڈ بی اور کنٹراکٹر کا اجلاس طلب کرتے ہوئے شکایات کا جائزہ لیا جائے گا۔ دورہ کے موقع پر جامعہ نظامیہ کے ذمہ داروں نے بھی کنٹراکٹر کے رویہ کی شکایت کی اور کہا کہ موجودہ سست روی سے بانی جامعہ نظامیہ کے عرس تک کاموں کی تکمیل ممکن نظر نہیں آتی۔ یہ پراجیکٹ 14 کروڑ روپئے کے خرچ سے تعمیر کیا جارہا ہے اور وقف بورڈ نے ابھی تک 5 کروڑ روپئے جاری کردیئے ہیں۔ اس موقع پر محمد سلیم نے آڈیٹوریم کے فرنیچر کے نمونوں کا بھی معائنہ کیا اور کہا کہ معیاری فرنیچر نصب کیا جائے۔ آڈیٹوریم کی تعمیر کے بعد یہ شہر کا ایک مثالی اور عصری آڈیٹوریم رہے گا۔ انہوں نے کہا کہ چیف منسٹر کے چندر شیکھر رائو پراجیکٹ کی تکمیل میں خصوصی دلچسپی رکھتے ہیں اور انہوں نے جامعہ نظامیہ کی خدمات کا اعتراف کرتے ہوئے آڈیٹوریم کی تعمیر کا فیصلہ کیا ہے۔ محمد سلیم نے کہا کہ جامعہ نظامیہ کی ڈگری کو عثمانیہ یونیورسٹی کی ڈگری کے مماثل درجہ دیا گیا ہے جو ٹی آر ایس حکومت کا کارنامہ ہے۔ انہوں نے بتایا کہ اوورسیز اسکالرشپ اسکیم میں دینی مدارس کے طلبہ کو شامل کرنے کی تجویز حکومت کے زیر غور ہے۔ آر اینڈ بی کے عہدیداروں نے تیقن دیا کہ اس مسئلہ پر کنٹراکٹر کو پابند کریں گے۔ اس موقع پر صدرنشین وقف بورڈ محمد سلیم نے بانیٔ جامعہ نظامیہ کی مزار پر حاضری دی اور فاتحہ خوانی کی۔صدر مفتی مولانا مفتی عظیم الدین نے دعا کی۔

TOPPOPULARRECENT