Monday , September 24 2018
Home / اضلاع کی خبریں / جامع سروے ،بدعنوانیوں کو دور کرنے میں مددگار

جامع سروے ،بدعنوانیوں کو دور کرنے میں مددگار

نلگنڈہ /14 اگست ( سیاست ڈسٹرکٹ نیوز ) حکومت تلنگانہ کی جانب سے کئے جانے والے مکمل جامع گھریلو سروے کے موقع پر ہر فرد اپنی سماجی ذمہ داری سمجھ کر مکمل معلومات کی اطلاع درج کروانا چاہئے ۔ حکومت کا مقصد کو روبہ عمل لائی جانے والی تمام فلاحی اسکیموں کو مستحق خاندانوں تک پہونچانا ہے ۔ یہ بات ضلع کلکٹر نلگنڈہ مسٹر ٹی چرنجیولو نے پی آر ٹی یو ب

نلگنڈہ /14 اگست ( سیاست ڈسٹرکٹ نیوز ) حکومت تلنگانہ کی جانب سے کئے جانے والے مکمل جامع گھریلو سروے کے موقع پر ہر فرد اپنی سماجی ذمہ داری سمجھ کر مکمل معلومات کی اطلاع درج کروانا چاہئے ۔ حکومت کا مقصد کو روبہ عمل لائی جانے والی تمام فلاحی اسکیموں کو مستحق خاندانوں تک پہونچانا ہے ۔ یہ بات ضلع کلکٹر نلگنڈہ مسٹر ٹی چرنجیولو نے پی آر ٹی یو بھون میں منڈل سطح کی تربیتی کلاسییس کو مخاطب کرتے ہوئے بتائی ۔ انہوں نے کہا کہ 19 اگست کو کئے جانے والا سروے حکومت کی اسکیمات سے مستحقین کو استفادہ کروانے کیلئے ضروری ہے کہ علحدہ اسکیمات کی عمل آوری میں بدعنوانیوں کو دور کرنے میں مددگار ثابت ہوتی ہے ۔ سروے کے موقع پر ہر ایک بینک اکاونٹ نمبر کو ضرور درج کروائیں کیونکہ اسکیمات سے آنے والی سبسیڈی استفادہ کنندوں کے بینک اکاونٹ میں جمع ہوسکے ۔ سروے کو انیومانیٹرس خدمت کے جذبہ کے تحت کرنا چاہئے ۔ انہوں نے کہا کہ گھریلو جامع سروے کیلئے ضلع میں 35 ہزار اینومانیٹرس کی خدمت حاصل کرنے کے علاوہ مزید 10 فیصد اینوماانیٹرس کو محفوظ رکھا جارہا ہے ۔ انہوں نے بتایا کہ ضلع میں نقل مقام کرنے والے دوبارہ اپنے آبائی مقامات کو واپس آنے اور دیگر مقامات سے آکر ضلع میں رہائش اختیار کرنے کی وجہ 90 ہزار مکانات کا اضافہ ہوا ہے اور کہا کہ ضلع کو 219 سیکٹرس تقسیم کرکے عہدیداروں کو متعین کیا گیا ہے اور 360 پرائیویٹ بسوں اور 420 جیپ گاڑیوں کو سروے کے دن استعمال کیا جائے گا ۔ ضلع میں 10 سنٹرس پر 2680 کمپیوٹرس کا استعمال کرتے ہوئے ڈاٹا انٹری کروایا جائے گا ۔ حکومت کی اسکیمات سے صرف مستحقین تک پہونچانے کیلئے سروے کا اہم مقصد ہے ۔ عوام سے لی جانے والی اطلاعات کو تحصیلداروں کی ٹیم سے جانچ کروائی جائے گی ۔ اس پروگرام میں آر ڈی او نلگنڈہ جناب محمد ظہیر تحیصلدار شیلجا کمشنر بلدیہ نلگنڈہ وینوگوپال ریڈی ایم ای او ارون واور دیگر موجود تھے ۔

Top Stories

TOPPOPULARRECENT