Saturday , September 22 2018
Home / Top Stories / ججس کانفرنس کے وقت پر تنازعہ افسوسناک : وینکیا نائیڈو

ججس کانفرنس کے وقت پر تنازعہ افسوسناک : وینکیا نائیڈو

نئی دہلی 6 اپریل ( سیاست ڈاٹ کام ) ججس کانفرنس کے وقت پر پیدا ہوئے تنازعہ کوافسوسناک قرار دیتے ہوئے حکومت نے آج کہا کہ گڈ فرائی ڈے کے موقع پر کانفرنس کے انعقاد میں حکومت کا کوئی رول نہیں ہے ۔ انہوں نے اس مسئلہ کو سکیولرازم سے جوڑنے کی کوشش کرنے والوں کو تنقید کا نشانہ بنایا ۔ پارلیمانی امور کے وزیر وینکیا نائیڈو نے کہا کہ عدلیہ نے رام ن

نئی دہلی 6 اپریل ( سیاست ڈاٹ کام ) ججس کانفرنس کے وقت پر پیدا ہوئے تنازعہ کوافسوسناک قرار دیتے ہوئے حکومت نے آج کہا کہ گڈ فرائی ڈے کے موقع پر کانفرنس کے انعقاد میں حکومت کا کوئی رول نہیں ہے ۔ انہوں نے اس مسئلہ کو سکیولرازم سے جوڑنے کی کوشش کرنے والوں کو تنقید کا نشانہ بنایا ۔ پارلیمانی امور کے وزیر وینکیا نائیڈو نے کہا کہ عدلیہ نے رام نومی ‘ سنکرانتی اور ونائک چتورتھی جیسے تہواروں کے موقع پر بھی کسی سوال کے بغیر کام کیا ہے جبکہ یہ ایام ہندووں کیلئے مقدس ہیں۔ انہو نے اپوزیشن پر الزام عائد کیا کہ وہ بی جے پی اور حکومت کو بدنام کرنے افواہیں پھیلا رہی ہے ۔ نائیڈو نے کہا کہ انہیں چیف جسٹس کانفرنس کا گڈ فرائی ڈے کے موقع پر انعقاد مناسب نہیں لگا ہے اور اس بات سے بھی تکلیف ہوئی کہ کچھ لوگ اسے سکیولرازم کے مسئلہ سے جوڑ رہے ہیں۔ اس کانفرنس کے تعلق سے اس وقت تنازعہ پیدا ہوگیا تھا جب سپریم کورٹ کے جج جسٹس کورین جوزف نے گڈ فرائی ڈے کے موقع پر اس کے انعقاد پر اعتراض کیا تھا ۔ انہوں نے یہ مسئلہ چیف جسٹس آف انڈیا ایچ ایل دتو سے بھی رجوع کیا تھا اور اپنے اعتراض پر مبنی ایک مکتوب وزیر اعظم نریندر مودی کو راونہ کیا تھا ۔ نائیڈو نے واضح کیا کہ یہ کانفرنس حکومت کا پروگرام نہیں تھا اور یہ چیف جسٹس کی کانفرنس تھی جس کی منصوبہ بندی پہلے ہی کرلی گئی تھی ۔ نائیڈو نے پارٹی ہیڈ کوارٹرس میں بی جے پی کارکنوں سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ یہ کانفرنس پہلے بھی گڈ فرائی ڈے کے موقع پر منعقد ہوئی تھی جیسا کہ ریٹائرڈ جج کے ٹی تھامس نے کہا تھا ۔ انہوں نے کہا کہ سات سال قبل یہ کانفرنس گڈ فرائی ڈے کے موقع پر ہوئی تھی ۔ اس وقت نہ نریندر مودی اقتدار پر تھے اور نہ بی جے پی ۔ لیکن انہیں حیرت ہوئی کہ کچھ غیر متعلقہ لوگ اسے سکیولرازم سے جوڑ رہے ہیں ان میں ججس شامل نہیں ہیں ۔ وہ اس موقع کو حکومت کو نشانہ بنانے کیلئے استعمال کر رہے ہیں اور حکومت کے تعلق سے غلط اطلاعات پھیلا رہے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ حکومت کو بدنام کرنے ایسی کوششیں کی جا رہی ہیں جو افسوسناک ہے ۔ انہوں نے کہا کہ عدلیہ نے ماضی میں تہواروں کے دن بھی کام کیا ہے جو ہندووں کے مقدس دن تھے ۔

TOPPOPULARRECENT