Sunday , November 19 2017
Home / ہندوستان / جدید ٹکنالوجی کے استعمال میں عسکریت پسندوں کی بالادستی

جدید ٹکنالوجی کے استعمال میں عسکریت پسندوں کی بالادستی

انتہا پسندوں کا پتہ چلانا پولیس کیلئے زبردست چیلنج
نئی دہلی، 12 ڈسمبر (سیاست نیوز) دہلی، ممبئی اور بنگلور پولیس کے سربراہان کا کہنا ہے کہ سوشیل میڈیا اور ٹیکنالوجی کے استعمال میں انتہا پسندوں کی بالادستی پولیس کے لئے ایک زبردست چیلنج بن گئی ہے۔ گزشتہ 20 سال کے دوران عسکریت پسندی محدود دائرہ کار میں ہوتی تھی جسے کسی حکومت یا کسی گروپ کی سرپرستی حاصل رہتی تھی جس کا بہ آسانی پتہ چلایا جاسکتا تھا لیکن اب سوشیل میڈیا کے انقلاب سے صورتحال تبدیل ہوگئی ہے۔ دہلی کے پولیس کمشنر مسٹر بی ایس بسی نے بتایا کہ عسکریت پسند عناصر اپنی سرگرمیوں کیلئے ویب سائٹ اور سوشیل نیٹ ورک کو آلہ کار بنارہے ہیں جس کے ذریعہ ٹیلیفون مذاکرات اور مراسلت کی جاتی ہے لیکن مشتبہ سرگرمیوں کا پتہ چلانا مشکل اور پیچیدہ بن گیا ہے۔ تاہم انھوں نے بتایا کہ اگر ایک طرف ٹیکنالوجی عسکریت پسندوں کیلئے اعانت کررہی ہے تو دوسری طرف سکیوریٹی اداروں کے لئے بھی مددگار ثابت ہورہی ہے۔

TOPPOPULARRECENT