Tuesday , September 25 2018
Home / شہر کی خبریں / جذباتی تقاریر ، ذاتی حملے کرکے عوام کو بیوقوف نہیں بنایا جاسکتا ، عوام کا تاثر

جذباتی تقاریر ، ذاتی حملے کرکے عوام کو بیوقوف نہیں بنایا جاسکتا ، عوام کا تاثر

فیروز خاں تلگو دیشم امیدوار حلقہ نامپلی کا پیدل دورہ ، رائے دہندوں سے ملاقات

فیروز خاں تلگو دیشم امیدوار حلقہ نامپلی کا پیدل دورہ ، رائے دہندوں سے ملاقات

حیدرآباد۔ 20 اپریل (پریس نوٹ) حلقہ اسمبلی نامپلی تلگو دیشم کے امیدوار جناب محمد فیروز خاں نے 20 اپریل کو 5 بے شام سے علاقہ بازار گھاٹ میں شیرگلی، ریڈ ہلز، جنگم بستی، دیوی باغ، کیش مارکٹ علاقوں میں پیدل دورہ کرتے ہوئے گھر گھر جاکر بزرگ، خواتین اور نوجوانوں سے ملاقات کیا۔ پیدل دورہ کے موقع پر عوام نے فیروز خاں کا والہانہ استقبال کیا۔ جگہ جگہ گلپوشی کی گئی۔ ’’فیروز خاں آگے بڑھو ، ہم تمہارے ساتھ ہیں‘‘، کے نعرے لگائے گئے۔ فیروز خاں نے خوشی کا اظہار کیا۔ ایک خاتون نے کہا کہ فیروز خاں نے ہماری اولاد کی طرح ہمدردی کرتے ہوئے شدید گرما کے موسم میں پینے کا پانی سربراہ کیا جس کو ہم کبھی نہیں بھول سکتے، نامپلی میں خاموش انقلاب ضرور آئے گا۔ بزرگ خواتین نے فیروز خاں کو امام ضامن باندھا اور نیک تمناؤں کا اظہار کیا۔ فیروز خاں کی کامیابی کیلئے دعائیں بھی کیں۔ طلباء و طالبات نے تعلیمی شعور بیدار کرنے کے لئے تعلیمی اشیاء فراہم کرنے پر خوشی کا اظہار کیا۔ فیروز خاں ایک اچھے امیدوار کے ساتھ ایک ہمدرد انسان بھی ہیں۔ لوگ سیاست میں دولت اور شہرت کے لئے آتے ہیں لیکن فیروز خاں عوام کی خدمت کے جذبہ کو لے کر آئے ہیں۔ نوجوانوں نے فیروز خاں سے کہا کہ جذباتی تقاریر اور شخصی حملے کرتے ہوئے عوام کو بیوقوف بنانے کی کوشش کی جارہی ہے لیکن وہ وقت دور نہیں ہے، زمانہ بدل چکا ہے ، تعلیمی شعور ہے، اچھے برے کو پہچان سکتے ہیں اور یہ بھی کہا گیا کہ الیکشن میں آپ اپنے حلقہ میں اپنی کارکردگی پر روشنی ڈالیں اور بتائیں کہ آپ نے عوام کے لئے کیا کیا ہے، بجائے اس کے جذباتی تقاریر کے ذریعہ ذاتی زندگی پر رکیک حملے کرنا کیا یہی الیکشن ہے۔

آپ اگر ووٹ مانگنا چاہتے ہیں تو اپنی کارکردگی پر ووٹ مانگئے، فضول باتوں سے کسی کا پیٹ نہیں بھرتا، بلکہ لیڈروں کے گھر ضرور بھرجاتے ہیں۔ دورہ پر عوام کے تاثرات سننے کے بعد فیروز خاں نے کہا کہ سب سے بڑی خوشی یہ ہے کہ عوام میرے ساتھ ہیں۔ میں ایک مضبوط امیدوار آپ ہی کی بدولت بن سکا ہوں۔ مجھے الیکشن لڑنے کا حوصلہ بھی آپ ہی سے ملا ہے ، بجائے اس کے یہ کہنا کہ میرے مقابل جو امیدوار ہے اس کی کیا پہچان ہے، کاروان کا ہے ، کیا وہ حلقہ نامپلی کا ہے، اصل امیدوار کون ہے پتہ بھی نہیں چل پارہا ہے۔ بلکہ مقامی جماعت کے قائدین اپنی پوری طاقت حلقہ نامپلی پر جھونک رہے ہیں۔ اسی لئے لاکھ رکاوٹوں کے باوجود آپ کی دعاؤں سے ٹکٹ حاصل ہوا ہے اور کئی سازشوں کے باوجود میں کامیاب ہوکر آپ کی خدمت کروں گا۔

TOPPOPULARRECENT