Saturday , December 15 2018

جذباتی نعروں کی بجائے حکمت عملی سے اپنے ووٹ کا استعمال کریں

ممبئی ۔ 14 اکٹوبر (سیاست ڈاٹ کام) آل انڈیا ملی کونسل کی جانب سے مراٹھی پترکار سنگھ میں ایک پریس کانفرنس کے دوران کونسل کے صدر رشید عظیم نے اپنے خیالات کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ اس کانفرنس کا اصل مقصد موجودہ اسمبلی الیکشن کا تجزیہ کرتے ہوئے عوام کو یہ پیغام دینا ہیکہ مہاراشٹرا کی عوام اپنے حق رائے دہی کا صحیح استعمال کرتے ہوئے اپنے ووٹ

ممبئی ۔ 14 اکٹوبر (سیاست ڈاٹ کام) آل انڈیا ملی کونسل کی جانب سے مراٹھی پترکار سنگھ میں ایک پریس کانفرنس کے دوران کونسل کے صدر رشید عظیم نے اپنے خیالات کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ اس کانفرنس کا اصل مقصد موجودہ اسمبلی الیکشن کا تجزیہ کرتے ہوئے عوام کو یہ پیغام دینا ہیکہ مہاراشٹرا کی عوام اپنے حق رائے دہی کا صحیح استعمال کرتے ہوئے اپنے ووٹ سیکولر امیدوار کو دیں تاکہ فرقہ پرست طاقتوں کے ناپاک منصوبوں کو شکست ہو اور ساتھ ہی ساتھ عوام سے یہ بھی اپیل ہیکہ جذباتی نعروں کی بجائے حکمت عملی سے اپنے ووٹ کا استعمال کرتے ہوئے ایسا امیدوار چنیں جو عوام کے تئیں خدمات اور خلوص کا جذبہ بغیر کسی بلا تفریق و مذہب و ملت رکھتا ہو تاکہ ووٹ تقسیم نہ ہوسکے۔ انہوں نے کہا کہ موجودہ اسمبلی الیکشن کا جائزہ لیں تو حالات کافی سنجیدہ اور پیچیدہ نظر آرہے ہیں۔ سیاسی میدان میں مہارت رکھنے والے سیاسی تجزیہ نگار بھی خاموش ہیں کہ آخر ووٹ کس کے حق میں دیا جائے اور

صحیح ووٹ کا حقدار کون ہے ایسے بہت سے سوالات ہر خاص و عام کے ذہن میں گردش کررہے ہیں۔ مہاراشٹرا کی عوام باشعور اور بیدار ہوچکی ہیں۔ وہ جانتی ہیکہ سیکولر ووٹوں کا صحیح حقدار کون ہے اور ہمیں کس امیدوار کو ووٹ دینا ہے۔ سیکولر ووٹ کے معنی ہیکہ ہندو مسلم انتشار کی طرف نہ جاتے ہوئے اتحاد سے کام لیکر اپنے ووٹ کا استعمال کریں تاکہ معاشرہ کو بدعنوانی اور فرقہ پرست طاقتوں سے محفوظ کیا جائے۔ آل انڈیا ملی کونسل ان تمام سیکولر پارٹیوں کی تائید کرتی ہیں جنہوں نے قوم و ملت کی فلاح میں بہترین خدمات انجام دی ہے۔ مہاراشٹرا کی عوام سے اپیل ہیکہ وہ اپنا قیمتی ووٹ ایسے امیدوار کو دیں جو اسمبلی میں ان کے مسائل کی بہترین نمائندگی کرنے کی صلاحیت اور قابلیت رکھتا ہو۔ انہوں نے کہا کہ عوام قومی یکجہتی کا مظاہرہ کرتے ہوئے بغیر کسی ذات پات اور بلاتفریق اپنا قیمتی ووٹ سیکولر امیدوار کو دے کر ووٹوں کی تقسیم کے ناپاک منصوبوں کے تحت جو فرقہ پرست طاقتیں میدان میں اتری ہیں انہیں منہ توڑ جواب دے سکے۔

TOPPOPULARRECENT