Saturday , November 18 2017
Home / جرائم و حادثات / جرائم اورا طلاعات کے ڈیجیٹل ریکارڈ میں تلنگانہ پولیس سر فہرست

جرائم اورا طلاعات کے ڈیجیٹل ریکارڈ میں تلنگانہ پولیس سر فہرست

دیگر ریاستوں پر تلنگانہ کو سبقت ۔ مرکزی وزیر داخلہ راج ناتھ سنگھ کی جانب سے ستائش
حیدرآباد۔/22 اگسٹ ، ( سیاست نیوز) جرائم اور اطلاعات کے ڈیجیٹل ریکارڈ میں تلنگانہ پولیس نے نیا ریکارڈ قائم کیا ہے اور ملک کی دیگر ریاستوں کے مقابل پولیس شعبہ کو جدید ٹکنالوجی سے مربوط کرنے میں سرفہرست مقام حاصل کیا ہے۔ مرکزی ادارہ کرائم اینڈ کریمنل ٹریکنگ نیٹ ورک سسٹم ( سی سی ٹی این ایس ) کے تحت تمام پولیس اسٹیشنوں کو ڈیجیٹل سہولیات کے دائرے میں لاتے ہوئے ایف آئی آر سے لیکر جرائم پیشہ افراد کا ریکارڈ اور اطلاعات کو کمپیوٹرائزڈ کرنے میں تلنگانہ پولیس نے ریکارڈ بنایا ۔ بتایا جاتا ہے کہ تلنگانہ پولیس کی کارکردگی کی مرکزی وزیر داخلہ راج ناتھ سنگھ نے سراہنا کی ہے۔ ہر 6 ماہ میں تمام ریاستوں کے پولیس محکموں کے متعلق جائزہ لیا جاتا ہے جو جدید ترقی کے نام پر ہوتا ہے ۔ محکمہ پولیس کے علاوہ عدلیہ، محابس، جوینائیل ہومس، جرائم کی تحقیقات ، فنگر پرنٹ شعبہ، فارنسک شعبہ و دیگر اہم شعبوں کو ( سی سی ٹی ایس ایس ) سسٹم کے تحت لانے تیار کردہ ڈیجیٹل پولیس پوٹرل کا افتتاح عمل میں لایا گیا اور اس سلسلہ میں ہوم ڈپارٹمنٹ نے اس سسٹم کے متعلق کارکردگی رپورٹ جاری کی ۔ جاریہ سال جون تک حاصل شدہ ریکارڈ کے مطابق تلنگانہ پولیس نے مختلف شعبوں میں صد فیصد نتائج کو ممکن بنایا ہے اس رپورٹ کے مطابق تمام ریاستوں کا اوسط نشانہ 67.8 فیصد رہا جبکہ تلنگانہ نے93.1 فیصد نشانات حاصل کئے ۔ پرانے جرائم کی تفصیلات کو ڈیجیٹل کرنے میں اور ڈیجیٹل ریکارڈ آن لائن فراہم کرنے میں تلنگانہ پولیس کا کوئی جواب نہیں ۔ تلنگانہ پولیس نے اس شعبہ میں صد فیصد نشانات حاصل کئے ۔ جبکہ ہماچل پردیش 91فیصد کے ساتھ دوسرے ‘ہریانہ 90.7 فیصد کے ساتھ تیسرے اور مہاراشٹرا 89.8 فیصد کے ساتھ چوتھے نمبر پر ہیں۔ اس طرح جرائم اینڈ کریمنل ٹرائکنگ نیٹ ورک سسٹم اسکیم کے تحت فنڈز کے استعمال میں اور فوری استعمال کرکے تلنگانہ پولیس نے 83.1 فیصد نشانات حاصل کئے ۔ مرکزی سطح پر تلنگانہ پولیس کی ستائش اور ریکارڈ نشانات کو حاصل کرنے پر ریاستی پولیس حلقوں میں خوشی کی لہر ہے۔

TOPPOPULARRECENT