Sunday , November 19 2017
Home / دنیا / جرمنی : مسافر ٹرین میں کلہاڑی سے حملہ ، دولت اسلامیہ ملوث

جرمنی : مسافر ٹرین میں کلہاڑی سے حملہ ، دولت اسلامیہ ملوث

ولفبرگ ۔ 19 جولائی (سیاست ڈاٹ کام) جرمنی کے صوبے باویریا کے وزیر داخلہ کے مطابق ایک 17 سالہ افغان پناہ گزین نے مسافر ٹرین میں کلہاڑی اور خنجر سے حملہ کر کے 4 افراد کو شدید زخمی کردیا۔ بعد ازاں پولیس کی فائرنگ سے حملہ آور مارا گیا۔ جرمن ٹی وی سے گفتگو کرتے ہوئے وزیر داخلہ یوآخم ہیرمان نے کہا کہ حملے کی وجوہات کے حوالے سے ابھی کچھ کہنا قبل از وقت ہوگا۔ خیال ہے کہ حملہ آور ولفسبرگ شہر کے نزدیک واقع قصبے اوشنفرٹ میں رہتا تھا۔ یہ واقعہ فرانس کے شہر نیس میں ایک تیونسی نڑاد شہری کی جانب سے قومی دن کی تقریب میں شریک افراد پر ٹرک چڑھا دینے کے واقعے کے چند روز بعد پیش آیا ہے۔ اْس کارروائی میں 84 افراد ہلاک ہوگئے تھے۔ غالب گمان ہے کہ اس تازہ ترین حادثے کے نتیجے میں یورپ میں انفرادی حملہ آوروں کی جانب سے کیے جانے والے حملوں سے متعلق خوف اور اندیشے گہرے ہوجائیں گے۔ اس کے علاوہ جرمن چانسلر اینجلا مرکل کو سیاسی دباؤ کا بھی سامنا ہوگا جنہوں نے گزشتہ برس جرمنی میں لاکھوں پناہ گزینوں کا خیرمقدم کیا تھا۔ ولفسبرگ شہر کے نواح میں ایک اسٹیشن پر ٹرین کے رکنے کے بعد حملہ آور ٹرین سے فرار ہوگیا، پولیس کی جانب سے راستہ روکے جانے پر اس نے جوابی حملے کی کوشش بھی کی تھی تاہم اس کو فائرنگ سے ہلاک کردیا گیا۔تازہ اطلاع کے مطابق ٹرین پر حملہ کی ذمہ داری دولت اسلامیہ نے قبول کی ہے۔ حکام کا کہنا ہے کہ ٹرین میں کلہاڑی اور چاقو سے حملہ کرنے والے افغان نوجوان پناہ گزین کے کمرے سے شدت پسندتنظیم دولت اسلامیہ کا ہاتھ سے پینٹ کیا ہوا پرچم ملا ہے۔ 17 سالہ نوجوان نے جنوبی جرمنی کی ریاست بویریا کے شہر ویورسبرگ میں ایک ٹرین میں یہ حملہ پیر کی شام کو کیا۔ حملے میں ہانگ کانگ کے چار افراد زخمی ہو گئے ہیں جن میں سے تین افراد کی حالت تشویشناک بتائی جاتی ہے۔ بعد میں پولیس نے حملہ آور کو گولی مار کر ہلاک کر دیا۔

TOPPOPULARRECENT