Friday , January 19 2018
Home / دنیا / جرمنی میں اسلامک اسٹیٹ کی معاونت پر پابندی

جرمنی میں اسلامک اسٹیٹ کی معاونت پر پابندی

برلن ، 12 ستمبر (سیاست ڈاٹ کام) جرمنی نے آج اعلان کیا ہے کہ عراق اور شام کے ایک وسیع علاقے پر قابض گروہ اسلامک اسٹیٹ یورپی سلامتی کیلئے خطرہ اور جرمنی میں اس تنظیم کی معاونت پر پابندی عائد کر دی ہے۔ جرمن وزیرداخلہ تھوماس دے میزیئر نے بتایا کہ اس فوری پابندی میں، اس جہادی گروہ کیلئے عسکریت پسندوں کی بھرتی، اس تنظیم کے نشانات اور جھنڈے

برلن ، 12 ستمبر (سیاست ڈاٹ کام) جرمنی نے آج اعلان کیا ہے کہ عراق اور شام کے ایک وسیع علاقے پر قابض گروہ اسلامک اسٹیٹ یورپی سلامتی کیلئے خطرہ اور جرمنی میں اس تنظیم کی معاونت پر پابندی عائد کر دی ہے۔ جرمن وزیرداخلہ تھوماس دے میزیئر نے بتایا کہ اس فوری پابندی میں، اس جہادی گروہ کیلئے عسکریت پسندوں کی بھرتی، اس تنظیم کے نشانات اور جھنڈے کی عوامی سطح پر نمائش اور سوشل میڈیا پر اس تنظیم کیلئے پروپیگنڈے جیسی سرگرمیوں کو ہدف بنایا گیا ہے۔ ان کا کہنا تھا کہ جرمنی ایک مضبوط جمہوریت ہے اور یہاں کسی دہشت گرد گروہ کیلئے کوئی جگہ نہیں۔ یہ بات بھی اہم ہے کہ گزشتہ ماہ جرمنی نے اس تنظیم کے خلاف سرگرم کرد فورسز کو ہتھیار مہیا کرنے کا اعلان بھی کیا تھا۔

عراق و شام میں 31 ہزار جہادی ممکن : سی آئی اے
واشنگٹن ، 12 ستمبر (سیاست ڈاٹ کام) امریکی خفیہ ادارہ سی آئی اے کے مطابق اسلامک اسٹیٹ کے جنگجوؤں کی تعداد 20,000 سے 31,500 کے درمیان ہو سکتی ہے۔ سی آئی اے کے ترجمان ریان تراپانی نے بتایا کہ خفیہ ذرائع سے حاصل ہونے والی معلومات کے بعد یہ نئے اعداد و شمار جاری کئے جا رہے ہیں۔ اس سے قبل اندازہ لگایا گیا تھا کہ شام اور عراق میں آئی ایس کے دس ہزار عسکریت پسند سرگرم ہیں۔ سی آئی اے کے مطابق مغربی ممالک کے کچھ شہری بھی دہشت گردانہ سرگرمیوں میں آئی ایس کا ساتھ دے رہے ہیں۔ اس دوران پنٹگان نے بتایا ہے کہ امریکی فضائی دستے شمالی عراق کے شہر اربیل سے جلد آئی ایس کے ٹھکانوں کو نشانہ بنانا شروع کریں گے۔

TOPPOPULARRECENT