جرمنی میں مسلمانوں اور مساجد پر 950 سے زائدحملے

برلن ۔ 3مارچ ( سیاست ڈاٹ کام ) جرمن وزارت داخلہ کی جانب سے جاری کردہ اعداد و شمار کے مطابق گزشتہ برس ملک بھر میں مسلمانوں اور مساجد پر 950سے زائد حملے ریکارڈ کیے گئے۔ ان حملوں میں کم از کم 33افراد زخمی ہوئے۔ پولیس کے مطابق تقریباً تمام ہی حملوں میں دائیں بازو کی قوتیں ملوث تھیں۔ 60واقعات میں مساجد یا مسلمانوں کے دیگر عمارتوں کو نقصان پہنچایاگیا۔ کچھ واقعات میں نقاب کرنے والی عورتوں پر حملوں کے ساتھ ساتھ نفرت انگیز جملے کسے گئے۔ علاوہ ازیں مساجد پر نازیبا جملے بھی لکھے گئے۔ جرمنی میں مسلمانوں کے خلاف حملوں کے اعداد و شمار اکھٹے کرنے کا آغاز پچھلے سال ہی شروع کیا گیا تھا۔
واضح رہے کہ جرمنی میں مسلم مہاجرین کے خلاف قوم پرست جماعت کی جانب سے پہلے ہی نفرت انگیز مہم جاری ہے ۔

TOPPOPULARRECENT