Tuesday , December 12 2017
Home / دنیا / جرمن سیکیورٹی کمپنیاں پناہ گزینوں کو جسم فروشی پر اکسانے لگیں

جرمن سیکیورٹی کمپنیاں پناہ گزینوں کو جسم فروشی پر اکسانے لگیں

برلن ۔ 26 اکٹوبر (سیاست ڈاٹ کام) مشرق وسطیٰ سے یورپی ملکوں کو بڑی تعداد میں نقل مکانی کرنے والے پناہ گزینوں کے ان گنت دیگر مسائل کی خبروں کے تناظر میں مہاجرین کے حوالے سے جرمنی کے سیکیورٹی اداروں کا ایک لرزہ خیز اسکینڈل سامنے آیا ہے۔جرمنی کے ذرائع ابلاغ نے انکشاف کیا ہے کہ پناہ گزینوں کی نگرانی کے لیے قائم سیکیورٹی کمپنیاں پناہ گزینوں بالخصوص کم عمر افراد کو جسم فروشی کے مکروہ کاروبار پر مجبور کرتی ہیں۔ اس چونکا دینے والے انکشاف نے جرمن حکومت کو بھی ہلا کر رکھ دیا ہے۔جرمنی کے جنرل ٹی وی چینل کی رپورٹ کے مطابق جرمن چانسلر انجیلا میرکل کے ترجمان اسٹیفن زابیرٹ نے پناہ گزینوں کو جسم فروشی جیسے مکروہ کاروبار پر مجبور کرنے والی خبروں پر تبصرہ کرتے ہوئے کہا کہ اگر یہ خبریں درست ہیں تو ہم ان واقعات کی باریک بینی سے تحقیقات کرائیں گے۔ یہ بات قطعا ناقابل قبول ہے کہ کوئی کمپنی یا ادارہ پناہ گزینوں کی ابتر معاشی حالات کو اپنے ناجائز مقاصد کے لیے استعمال کرے۔

TOPPOPULARRECENT