Sunday , October 21 2018
Home / Top Stories / جسٹس راجندر سچر نہیں رہے

جسٹس راجندر سچر نہیں رہے

نئی دہلی، 20 اپریل (سیاست ڈاٹ کام) انسانی حقوق کے ممتاز علمبردار اور دلی ہائی کورٹ کے سابق چیف جسٹس راجندر سچر کا آج یہاں انتقال ہوگیا۔ وہ 94 برس کے تھے ۔پسماندگان میں ایک بیٹا اور ایک بیٹی ہیں۔صبح تقریبا 11 بجے ایک پرائیویٹ اسپتال میں انہوں نے آخری سانس لی۔ آخری رسومات آج شام تقریبا ساڑھے پانچ بجے لودھی روڈ پر واقع شمشان میں ادا کی جائیں گی۔ یہ اطلاع ان کے کنبے کے ذرائع نے دی ہے ۔جسٹس سچر 22 دسمبر 1923 کو لاہور میں پیدا ہوئے تھے ۔ ان کے دادا لاہور ہائی کورٹ کے ممتاز فوجداری وکیل تھے ۔ جسٹس راجندر سچر 1970 میں دلی ہائی کورٹ میں ایڈیشنل جسٹس مقرر ہوئے تھے ۔ وہ واحد جج تھے جنہوں نے ایمرجنسی میں حکومت کی ایمرجنسی سے متعلق ہدایات کو ماننے سے انکار کردیا تھا۔ وہ اگست 1985 سے دسمبر 1985 تک دلی ہائی کورٹ کے چیف جسٹس رہے ۔ وہ سوشلسٹ نظریات پر یقین رکھتے تھے اور انسانی حقوق کے پیروکار تھے اور انسانی حقوق کے تحفظ سے متعلق اقوام متحدہ کے کمیشن کے بھی رکن رہ چکے تھے ۔

Top Stories

TOPPOPULARRECENT