Monday , July 16 2018
Home / ہندوستان / جسٹس کھانویلکر کا بوفورس مقدمہ کی سماعت سے اجتناب

جسٹس کھانویلکر کا بوفورس مقدمہ کی سماعت سے اجتناب

نئی دہلی 13 فروری (سیاست ڈاٹ کام) بوفورس معاملت میں 64 کروڑ روپئے کی رشوت ستانی سے متعلق سیاسی طور پر حساس مقدمہ کی سماعت سے سپریم کورٹ کے جسٹس اے ایم کھانویلکر نے خود کو دور رکھا ہے۔ جسٹس کھانویلکر نے جو چیف جسٹس دیپک مصرا کی زیرقیادت بنچ میں شامل تھے اس مقدمہ کی سماعت سے کنارہ کشی اختیار کرنے کی وجہ نہیں بتائی۔ اس بنچ نے جس میں جسٹس ڈی وائی چندرا چوڑ بھی شامل ہیں، کہاکہ 28 مارچ کو اس مقدمہ کی آئندہ سماعت کے لئے ایک نئی بنچ تشکیل دی جائے گی۔ عدالت عظمیٰ اس ضمن میں بی جے پی کے ایک لیڈر اجئے اگروال کی طرف سے دائر کردہ درخواست پر سماعت کررہی ہے جس میں اس مقدمہ کے تمام ملزمین کو منسوبہ الزامات سے بری کرنے دہلی ہائی کورٹ کے فیصلہ مورخہ 31 مئی 2005 ء کو چیلنج کیا گیا ہے۔ سی بی آئی نے عدالت کو مطلع کیا ہے کہ ہائی کورٹ کے احکام کے خلاف اس نے 2 فروری کو ایک اپیل دائر کی۔ عدالت عظمیٰ میں آج اگروال کی درخواست پر سماعت مقرر تھی جس (درخواست) میں اُنھوں نے اس مقدمہ میں فریق ثالث کی حیثیت سے اپیل دائر کرنے اپنے جواز پر وضاحت بیان کیا تھا۔

TOPPOPULARRECENT