Monday , June 25 2018
Home / جرائم و حادثات / جعلی تعلیمی صداقت ناموں کے کاروبار پر دو افراد گرفتار

جعلی تعلیمی صداقت ناموں کے کاروبار پر دو افراد گرفتار

28 اسناد ، موبائیل فون اور دیگر اشیاء ضبط

28 اسناد ، موبائیل فون اور دیگر اشیاء ضبط
حیدرآباد ۔ /12 مارچ (سیاست نیوز) جعلی تعلیمی سرٹیفکیٹس کے کاروبار میں ملوث دو افراد کو ٹاسک فورس پولیس نے گرفتار کرلیا ۔ تفصیلات کے بموجب اے راما راؤ اپنے ساتھی کے روی کمار کی مدد سے مختلف یونیور سٹیز کے جعلی تعلیمی سرٹیفکیٹس کرتے ہوئے انہیں خواہشمند گاہکوں کو فروخت کررہے تھے ۔ پولیس نے بتایا کہ راما راؤ کا تعلق ضلع سریکاکولم سے ہے اور وہ سابق میں اے پی پی ایس ای میں کلرک کی حیثیت سے ملازمت کرچکا ہے اور چند سال قبل دلسکھ نگر علاقہ میں گائتری ایجوکیشنل اکیڈیمی قائم کیا اور اس ادارے کی آڑ میں وہ جعلی تعلیمی سرٹیفکیٹس کا کاروبار کا آغاز کیا ۔ خواہشمند گاہکوں کو 30 ہزار سے 50 ہزار روپیوں میں سرٹیفکیٹس فروخت کئے جارہے تھے ۔ عثمانیہ یونیورسٹی ‘ آندھرا یونیورسٹی ‘ جے این ٹی یو کے علاوہ کئی یونیو رسٹیز کے انجنیئرنگ ‘ ڈپلوما اور دیگر تعلیمی سرٹیفکیٹس تیار کررہے تھے ۔ پولیس نے مذکورہ افراد کے قبضے سے 28 جعلی تعلیمی سرٹیفکیٹس دو موبائیل فون اور دیگر اشیاء برآمد کرلیا ۔

پڑوسیوں کے حملہ میں ایک شخص ہلاک
حیدرآباد /12 مارچ ( سیاست نیوز) پیٹ بشیرآباد کے علاقہ میں پڑوسیوں کے حملہ میں ایک شخص ہلاک ہوگیا ۔ پولیس ذرائع کے مطابق 32 سالہ بابو چاری جو دولہ پلی علاقہ کا ساکن تھا پیشہ سے کارپینٹر بتایا گیا ہے ۔ بابو چاری کا ان کے پڑوسیوں سے جھگڑا چل رہا تھا ۔ 9 مارچ کے دن مکان کے قریب جھاڑیوں کو لیکر تنازعہ پیدا ہوگیا اور بابو چاری پڑوسیوں راجو کرشنا اما اور ملاریا سے الجھ پڑا ۔ جس کے بعد راجو نے چاری کو شدید زدوکوب کیا اور چاری کو فوری ہاسپٹل منتقل کیا گیا جہاں 10 مارچ کے دن چاری کو ڈسچارج کردیا گیا ۔ تاہم کل اس کی صحت اچانک خراب ہوگئی ۔ جس کو گاندھی ہاسپٹل منتقل کیا گیا ۔ جہاں دوران علاج وہ فوت ہوگیا ۔ پیٹ بشیرآباد پولیس نے قتل کا مقدمہ درج کرتے ہوئے تحقیقات کا آغاز کردیا ہے ۔

TOPPOPULARRECENT