Saturday , September 22 2018
Home / ہندوستان / جعلی ڈگری کیس میں ماخوذ تومر کی درخواست ضمانت سے دستبرداری

جعلی ڈگری کیس میں ماخوذ تومر کی درخواست ضمانت سے دستبرداری

نئی دہلی 16 جون (سیاست ڈاٹ کام) جعلی ڈگری کیس میں ماخوذ دہلی کے سابق وزیر قانون جتندر سنگھ تومر نے آج سیشن کورٹ میں اپنی درخواست ضمانت سے دستبرداری اختیار کرلی اور بتایا کہ چونکہ انھیں 4 یوم کیلئے پولیس ریمانڈ میں بھیج دیا گیا لہذا وہ اس معاملہ کی فی الفور یکسوئی نہیں چاہتے ہیں۔ ایڈیشنل جج ویمل کمار نے تومر کے وکیل کے استدلال کو قبول

نئی دہلی 16 جون (سیاست ڈاٹ کام) جعلی ڈگری کیس میں ماخوذ دہلی کے سابق وزیر قانون جتندر سنگھ تومر نے آج سیشن کورٹ میں اپنی درخواست ضمانت سے دستبرداری اختیار کرلی اور بتایا کہ چونکہ انھیں 4 یوم کیلئے پولیس ریمانڈ میں بھیج دیا گیا لہذا وہ اس معاملہ کی فی الفور یکسوئی نہیں چاہتے ہیں۔ ایڈیشنل جج ویمل کمار نے تومر کے وکیل کے استدلال کو قبول کرتے ہوئے دہلی پولیس کے نمائندہ ایڈوکیٹ کو جواب دینے کی ہدایت دی۔ ایڈیشنل پبلک پراسکیوٹر اتل کمار سریواستو نے بتایا کہ درخواست ضمانت سے دستبرداری کیلئے تومر کی عرضی پر انھیں کوئی اعتراض نہیں ہے کیونکہ یہ معاملہ آگے بڑھانے یا نہ بڑھانے کا اختیار تومر کو حاصل ہے تاہم تومر کے وکیل ایڈوکیٹ ہریش جین نے بتایا کہ چونکہ ملزم کو 4 دن کیلئے پولیس ریمانڈ میں بھیج دیا گیا ہے لہذا ہم متعلقہ میٹرو پالیٹن مجسٹریٹ کے روبرو تازہ درخواست پیش کرنے کی آزادی کے ساتھ ضمانت کی عرضی سے دستبرداری اختیار کررہے ہیں اور یہ عرضی پولیس تحویل کی مدت ختم ہونے کے بعد تومر کی دوبارہ عدالت میں حاضری کے موقع پر پیش کی جائے گی۔ جس پر عدالت نے تومر کی درخواست کو سماعت کیلئے قبول کرلیا۔ مجسٹریل کورٹ نے کل تومر کی پولیس تحویل میں مزید 4 دن کی توسیع کردی تھی جب تحقیق کاروں (پولیس) نے بتایا کہ جعلی ڈگری کیس میں تحقیقات کیلئے انھیں (تومر) بنڈیلکھنڈ یونیورسٹی لے جانے کی ضرورت ہے۔

TOPPOPULARRECENT