Tuesday , January 23 2018
Home / اضلاع کی خبریں / جماعتوں کے بدلنے پر بھی قسمت نہ بدلی

جماعتوں کے بدلنے پر بھی قسمت نہ بدلی

یلاریڈی /21 مئی ( سیاست ڈسٹرکٹ نیوز ) لگاتار تین مرتبہ ناکام ہونے والے نلامڈگو سریندر نے چوتھی مرتبہ بھی آخر کار شکست کا ہی سامنا کیا ۔ سریندر کی قسمت ساتھ نہیں دے رہی ہے ۔ یلاریڈی حلقہ اسمبلی سے منتخب ہونے کیلئے سریندر سیاسی جماعتوں کو بدلتے رہے پھر بھی حلقہ کی عوام نے انہیں منتخب نہ کیا ۔ تین مرتبہ شکست اٹھانے پر اس مرتبہ ان کیلئے عو

یلاریڈی /21 مئی ( سیاست ڈسٹرکٹ نیوز ) لگاتار تین مرتبہ ناکام ہونے والے نلامڈگو سریندر نے چوتھی مرتبہ بھی آخر کار شکست کا ہی سامنا کیا ۔ سریندر کی قسمت ساتھ نہیں دے رہی ہے ۔ یلاریڈی حلقہ اسمبلی سے منتخب ہونے کیلئے سریندر سیاسی جماعتوں کو بدلتے رہے پھر بھی حلقہ کی عوام نے انہیں منتخب نہ کیا ۔ تین مرتبہ شکست اٹھانے پر اس مرتبہ ان کیلئے عوام میں ہمدردی کی لہر دیکھی جارہی تھی ۔ لیکن عوام کی ہمدردی کو ووٹوں میں تبدیل کرنے میں سریندر ناکام رہے ۔ مسٹر سریندر 2002 میں ٹی آر ایس احتجاجی جماعت میں داخل ہوئے اور 2004 کے عام انتخابات میں ٹی آرا یس پارٹی ٹکٹ نہ ملنے پر آزاد امدیوار کی حیثیت سے مقابلہ کرکے ٹی آر ایس امیدوار مسٹر رویندر ریڈی کے ہاتھوں شکست اٹھائی ۔ 2008 میں ٹی آر ایس چھوڑ کر تلگودیشم سے وابستہ ہوئے اور ضمنی چناؤ میں تلگودیشم پارٹی ٹکٹ پر مقابلہ کرکے دوسری مرتبہ شکست اٹھائی ۔ 2009 کے عام انتخابات میں ٹی آر ایس ، تلگودیشم میں مفاہمت ہونے سے یلاریڈی حلقہ ٹی آر ایس کو مختص کیا گیا تھا ۔ 2010 کے ضمنی چناؤ میں تیسری مرتبہ شکست کھائی ۔ اس کے بعد انہوں نے پھر سے ٹی آرایس میں 2012 میں داخلہ لیا لیکن 2014 سے ٹکٹ نہ ملنے پر سریندر نے کانگریس سے وابستہ ہوکر پارٹی ٹکٹ حاصل کیا ۔ اس مرتبہ ہمدردی کے ووٹ سے کامیابی کی صد فی صد توقع رکھنے پر بھی شکست ہی نصیب ہوئی ۔ ٹی آر ایس تلگودیشم ، کانگریس ، جماعتوں میں رہ کر مقابلہ کرلیا لیکن کامیابی ان کے ہاتھ نہ آسکی اور شکست ان کا مقدر بن کر رہ گئی ۔ کانگریس قائدین کی بے وفائی نے انہیں چوتھی مرتبہ بھی ناکام بنادیا۔

TOPPOPULARRECENT