Thursday , August 16 2018
Home / Top Stories / جمعہ کی شب 21 ویں صدی کا آخری طویل ترین چاند گہن

جمعہ کی شب 21 ویں صدی کا آخری طویل ترین چاند گہن

۔11:54 بجے شب آغاز ، 3:49 بجے اختتام ، 103 منٹ مکمل گہن ، شائقین کیلئے نادر فلکیاتی نظارہ

حیدرآباد۔ 22 جولائی (رتنا چوٹرانی) نادر فلکیاتی نظارہ کے شائقین کیلئے ہمیشہ دلچسپ سمجھے جانے والا 21 ویں صدی کا آخری طویل ترین چاند گہن 27 جولائی جمعہ کی شب نصف سے زائد کرۂ ارض پر دیکھا جائے گا۔ ہندوستان کے تمام حصوں میں یہ گہن مکمل طور پر دیکھا جائے گا۔ اس کے علاوہ ایشیا، آسٹریلیا، آفریقہ، یوروپ اور جنوبی امریکہ کے اکثر حصوں میں بھی دیکھا جائے گا۔ سادہ آنکھ سے دیکھا جانے والا یہ تقریباً 4 گھنٹے طویل چاند گہن کا کل جمعہ کی شب 11:53 بجے شروع ہوگا جو ہفتہ کی صبح 3:49 بجے ختم ہوگا۔ نہرو پلانیٹوریم، نہرو سنٹر ممبئی کے ڈائریکٹر اروند پرائچے کے مطابق یہ اس صدی کا طویل ترین مکمل چاند گہن رہے گا جس کا وقفہ 103 منٹ رہے گا۔ اس مدت کے دوران سورج، کرۂ ارض اور چاند تینوں ایک خطہ پر آجائیں گے اور چاند کے درمیان نظام شمسی کے دو کلیدی سیاروں کے درمیان رہنے اور بالخصوص زمین کے زیر سایہ ہونے کے سبب گہن زدہ چاند بالکل تاریک و سیاہ نظر آئے گا۔ ڈاکٹر اروند پرانچے نے یاد دلایا کہ 9 ڈسمبر 1992ء کو بھی ایسا ہی ایک مکمل چاند گہن ہوا تھا۔ اس وقت آسمان انتہائی تاریک تھا حتی کہ مدھم روشنی والے تارے بھی نظر آرہے تھے جبکہ چاند کا نظر آنا دشوار ہوگیا تھا۔ چاند گہن کے بارے میں تفصیلات بیان کرتے ہوئے ڈاکٹر اروند پرانچے نے کہا کہ یہ گہن اس وقت ہوتا ہے جب وہ زمین کے زیر سایہ آجاتا ہے اور کرۂ ارض اس والے بھی چاند اور سورج کے درمیان آجاتی ہے جس سے نہ صرف چاند پر پڑنے والی سورج کی روشنی مسدود ہوجاتی ہے، بلکہ کرۂ اراض کا تاریک سایہ چاند پر پڑتا ہے۔ گہن بالعموم چاند کی 14 ویں شب واقع ہوتا ہے اور چاند سورج کرۂ ارض کی مخالف سمت ہوتے ہیں۔

TOPPOPULARRECENT