Tuesday , December 11 2018

جموں وکشمیر میں اگلی حکومت نیشنل کانفرنس کی ہوگی:دیویندر سنگھ رانا

سرینگر ، 27نومبر (سیاست ڈاٹ کام) نیشنل کانفرنس کے سینئر لیڈر اور صوبائی صدر جموں دیویندر سنگھ رانا نے کہا کہ جموں وکشمیر میں اگلی حکومت نیشنل کانفرنس کی ہوگی۔ انہوں نے کہا کہ نیشنل کانفرنس ریاست کی خصوصی پوزیشن بالخصوص دفعہ 35 اے کے دفاع کے لئے ہر ممکن کوشش کرے گی۔دیویندر سنگھ رانا نے منگل کے روز جموں میں سابق کانگریسی لیڈر اور ریاستی وزیر خزانہ گرداری لعل ڈوگرہ کے 31 ویں یوم وصال کے سلسلے میں منعقدہ تقریب کے حاشئے پر نامہ نگاروں کو بتایا ‘نیشنل کانفرنس جمہوریت میں یقین رکھنے والی جماعت ہے ۔ نیشنل کانفرنس نے ہمیشہ ریاست میں جمہوریت کو مضبوط کرنے کی کوششیں کی ہیں۔ جب ہم اسمبلی انتخابات میں جائیں گے ، ہم اسی موقف کے ساتھ جائیں گے کہ سرکار بنائیں گے ۔ ریاست میں اگلی حکومت نیشنل کانفرنس کی ہوگی۔ ہماری حکومت ریاست کی خصوصی پوزیشن بالخصوص دفعہ 35 اے کے دفاع کے لئے ہر ممکن کوشش کرے گی’۔این سی صوبائی صدر نے کرتارپور راہداری کھولنے کو ایک غیرمعمولی اقدام قرار دیتے ہوئے کہا کہ اسی طرح جموں سیالکوٹ اور ایل او سی و بین الاقوامی سرحد کے آرپار تمام تاریخی راستوں کو کھولا جانا چاہیے ۔ انہوں نے کہا ‘کرتار پور کوریڈور کھولنا ایک غیرمعمولی اقدام ہے ۔ اس کی سراہنا ہونی چاہیے ۔ ہم بھی چاہتے ہیں کہ اسی طرح جموں سیالکوٹ روڑ اور ریاست کے باقی تمام تاریخی راستوں کو کھولا جائے ۔ لوگوں کا آنا جانا ہونا چاہیے ۔ جب لوگوں کا ملن ہوتا ہے تو دلوں کی دیواریں منہدم ہوتی ہیں۔ ہم چاہتے ہیں کہ وہاں کے لوگ یہاں آئیں اور یہاں کے لوگ وہاں جائیں’۔

گجرات کے وزیر داخلہ کو کینسر ہاسپٹل میں داخل
احمدآباد، 27نومبر (سیاست ڈاٹ کام) گجرات کے وزیر داخلہ وٹوا سیٹ سے چار بار رکن اسمبلی اور حکمراں بی جے پی کے سینئر لیڈر پردیپ سنگھ جڈیجہ کو کینسر ہونے کی بات سامنے آئی ہے جس کے بعد انہیں سرجری اور علاج کے لئے یہاں کے ایک پرائیویٹ اسپتال میں داخل کرایا گیا ہے ۔56 سالہ جڈیجہ کو منہ کے اندر گال کے حصے میں کینسر ہے ۔ انہیں یہاں ایچ سی جی کینسر سنٹر میں داخل کرایا گیا ہے جہاں کل ان کا آپریشن کیا گیا۔سنٹر کے سربراہ داکٹر سندیپ شاہ نے آج بتایا کہ مسٹر جڈیجہ ابھی دو سے تین دن تک آئی سی یو میں رہیں گے ۔ ان کی بایوپسی رپورٹ آن کے بعد پتہ چل سکے گا کہ ان کو کس اسٹیج کا کنسر ہے ۔خیال رہے کہ گجرات کی وجے روپانی حکومت کو بحران سے نکالنے میں اہم کردار ادا کرنے والے مسٹر جڈیجہ گزشتہ کچھ وقت سے سرکاری اور بی جے پی کے پروگراموں میں شامل نہیں ہورہے تھے ۔ان کے قریبی ذرائع نے بتایا کہ منہ کھولنے میں تکلیف کے بعد انہوں نے کچھ وقت پہلے جانچ کرائی تھی تو کینسر ہونے کا شبہ ظاہر کیا گیا تھا۔

TOPPOPULARRECENT