Wednesday , June 20 2018
Home / سیاسیات / جموں و کشمیر میں انتخابات کیلئے حالات سازگار نہیں : عمر عبداللہ

جموں و کشمیر میں انتخابات کیلئے حالات سازگار نہیں : عمر عبداللہ

نئی دہلی ۔ 14 اکٹوبر (سیاست ڈاٹ کام) وزیراعلیٰ جموں و کشمیر عمرعبداللہ نے آج ایک اہم بیان دیتے ہوئے کہا کہ ریاست کے حالات اسمبلی انتخابات منعقد کروانے کیلئے سازگار نہیں ہیں۔ وزیرداخلہ راجناتھ سنگھ سے ملاقات کے بعد اخباری نمائندوں سے بات کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ ریاستی حکومت حالانکہ اس موقف میں ہے کہ انتخابات منعقد کرواسکے لیکن مرک

نئی دہلی ۔ 14 اکٹوبر (سیاست ڈاٹ کام) وزیراعلیٰ جموں و کشمیر عمرعبداللہ نے آج ایک اہم بیان دیتے ہوئے کہا کہ ریاست کے حالات اسمبلی انتخابات منعقد کروانے کیلئے سازگار نہیں ہیں۔ وزیرداخلہ راجناتھ سنگھ سے ملاقات کے بعد اخباری نمائندوں سے بات کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ ریاستی حکومت حالانکہ اس موقف میں ہے کہ انتخابات منعقد کرواسکے لیکن مرکز کو یہ فیصلہ کرنا چاہئے کہ کیا اسمبلی انتخابات کیلئے حالات سازگار ہیں؟ عمر عبداللہ نے مزید کہا کہ قطعی فیصلہ الیکشن کمیشن کے اختیار میں ہے۔ انہوں نے کہاکہ ان کی پارٹی (نیشنل کانفرنس) نے واضح کردیا ہیکہ وہ انتخابات کی حامی نہیں ہے کیونکہ سیلاب کے بعد تباہ حال عوام معمول کی زندگی پر واپس آنے کیلئے جدوجہد کررہے ہیں۔ یاد رہیکہ جموں و کشمیر کی 87 رکنی اسمبلی کی 6 سالہ میعاد 19 جنوری 2015ء کو اختتام پذیر ہورہی ہے۔ انہوں نے کہا کہ حالیہ سیلاب نے صرف دیہی علاقوں کو ہی نہیں بلکہ وادی کشمیر کی کثیر آبادی والے علاقوں کو بھی شدید متاثر کیا۔ ایسی آفت ناگہانی کے وقت انتخابات منعقد کروانا عوام کو مزید مشکلات میں ڈالنے کے مترادف ہے لہٰذا الیکشن کمیشن سے نیشنل کانفرنس نے وضاحت کردی ہیکہ وہ فی الحال انتخابات منعقد کرنے کی حمایت نہیں کرے گی۔

الیکشن کمیشن کا ہفتہ کو دورہ سرینگر
اس دوران الیکشن کمیشن ہفتہ کو سرینگر کا دورہ کررہا ہے تاکہ صورتحال کا جائزہ لیا جاسکے جبکہ جموں و کشمیر میں اسمبلی انتخابات مقررہ شیڈول کے مطابق منعقد کرانے کا مطالبہ شدت اختیار کررہا ہے۔ چیف الیکشن کمشنر وی ایس سمپتھ اور الیکشن کمشنر ایچ ایس برہما اور نسیم زیدی یہ دورہ ایسے وقت کررہے ہیں جبکہ الیکشن کمشنر ونود زتشی نے گذشتہ ہفتہ سیلاب کی صورتحال کا جائزہ لینے کے مقصد سے یہاں کا دورہ کیا تھا۔ باوثوق ذارئع نے بتایا کہ الیکشن کمیشن مختلف سیاسی جماعتوں کے قائدین سے ملاقات کریں گے۔ حکمراں نیشنل کانفرنس جہاں انتخابات شیڈول کے مطابق منعقد کروانے کے حق میں نہیں، وہیں حلیف کانگریس کے علاوہ اصل اپوزیشن پی ڈی پی اور بی جے پی چاہتی ہیکہ سیلاب سے نقصانات کی پرواہ کئے بغیر مقررہ وقت یہ انتخابات ہونے چاہئے۔

TOPPOPULARRECENT