Monday , June 18 2018
Home / سیاسیات / جموں و کشمیر میں تشکیل حکومت کی تیاریاں قطعی مرحلے میں

جموں و کشمیر میں تشکیل حکومت کی تیاریاں قطعی مرحلے میں

جموں ۔ 17 فروری (سیاست ڈاٹ کام) جموں و کشمیر میں تشکیل حکومت کی قیاس آرائیوں کے دوران مرکزی وزیر جیتندر سنگھ نے ریاستی گورنر این این ووہرا سے آج ملاقات کی۔ انہوں نے بتایا کہ انتظامی اُمور سے متعلق مسائل پر بات چیت کی گئی۔ تقریباً ایک گھنٹہ طویل ملاقات کے بعد ذرائع ابلاغ کے نمائندوں سے بات چیت کرتے ہوئے جیتندر سنگھ نے کہا کہ گورنر چونک

جموں ۔ 17 فروری (سیاست ڈاٹ کام) جموں و کشمیر میں تشکیل حکومت کی قیاس آرائیوں کے دوران مرکزی وزیر جیتندر سنگھ نے ریاستی گورنر این این ووہرا سے آج ملاقات کی۔ انہوں نے بتایا کہ انتظامی اُمور سے متعلق مسائل پر بات چیت کی گئی۔ تقریباً ایک گھنٹہ طویل ملاقات کے بعد ذرائع ابلاغ کے نمائندوں سے بات چیت کرتے ہوئے جیتندر سنگھ نے کہا کہ گورنر چونکہ جموں و کشمیر میں انتظامی اُمور کے سربراہ ہیں اور مرکز و ریاست سے متعلق بعض ایسے اُمور ہیں جن پر ہم نے تبادلہ خیال کیا۔ انہوں نے کہا کہ اس موقع پر خاندان کی ایک تقریب میں شرکت کی انہوں نے دعوت بھی دی۔ اس لحاظ سے یہ ایک شخصی ملاقات تھی۔ جموں و کشمیر میں تشکیل حکومت میں تاخیر کے بارے میں پوچھے جانے پر انہوں نے کہا کہ اندرون پارٹی بعض قائدین کو ذمہ داری تفویض کی گئی۔ وہ تشکیل حکومت کے مسئلہ پر بات چیت کا سلسلہ جاری رکھے ہوئے ہیں اور وہی قائدین اس بارے میں تبصرہ کرسکتے ہیں۔

بی جے پی کی جانب سے پیپلز ڈیموکریٹک پارٹی کو رعایتوں کی پیشکش کے سلسلے میں آر ایس ایس کی ناراضگی کے بارے میں پوچھے جانے پر انہوں نے کہا کہ وہ اس مسئلہ پر بات نہیں کرسکتے اور انہیں ایسے موضوعات پر بات کرنے کی اجازت نہیں ہے۔ اس دوران راج بھون کے ترجمان نے کہا کہ گورنر ووہرا اور جیتندر سنگھ نے ریاست کی ترقی سے متعلق بعض اہم اُمور پر تبادلہ خیال کیا ہے۔ انہوں نے کہا کہ ریاست میں داخلی سلامتی کے علاوہ دیگر ترقیاتی موضوعات پر بات چیت کی گئی۔ترجمان نے کہا کہ مختلف وفود نے آج گورنر سے ملاقات کی اور ریاست کی ترقی سے متعلق اُمور کے بارے میں تبادلہ خیال کیا۔ منتخبہ رکن اسمبلی عثمان مجید اور عبدالرشید ڈار نے بھی گورنر سے علیحدہ ملاقاتیں کیں۔

اس دوران تشکیل حکومت کے سلسلے میں بی جے پی اور پی ڈی پی کے مابین تین ہفتوں کے دوران تین مختلف مقامات پر بات چیت کے 15 سے زائد دور ہوئے اور سمجھا جاتا ہے کہ مذاکرات قطعی مرحلے پر پہنچ چکے ہیں۔ باوثوق ذرائع نے بتایا کہ ہم مذاکرات کے فیصلہ کن مرحلے میں داخل ہوچکے ہیں اور اختلافات کو دُور کیا جارہا ہے۔ بی جے پی اور پی ڈی پی اتحاد کے علاوہ تشکیل حکومت کا کسی بھی وقت فیصلہ کیا جاسکتا ہے۔ انہوں نے کہا کہ ہر پارٹی کشمیر میں عوام کے وسیع تر مفاد میں سیاسی ایجنڈہ پیش کرنے کی کوشش کررہی ہے۔ ذرائع کے مطابق بعض اہم اُمور جیسے پاکستان سے باہمی روابط بحال کرنے کی کوششوں کے سلسلے میں پی ڈی پی چاہتی ہے کہ بی جے پی ٹھوس تیقن دے۔

TOPPOPULARRECENT