Tuesday , January 23 2018
Home / Top Stories / جموں و کشمیر میں نئی حکومت کیلئے مفتی سعید کو کانگریس کی حمایت

جموں و کشمیر میں نئی حکومت کیلئے مفتی سعید کو کانگریس کی حمایت

سرینگر 25 ڈسمبر (سیاست ڈاٹ کام) جموں و کشمیر میں تشکیل حکومت کے مسئلہ پر تعطل برقرار ہے۔ کانگریس ریاستی یونٹ نے آج پی ڈی پی کے بانی مفتی محمد سعید کی زیرقیادت نئی حکومت تشکیل دینے کی پرزور حمایت کی اور کہاکہ کانگریس جموں و کشمیر اسمبلی انتخابات میں عوام کے فیصلہ کا احترام کرتی ہے۔ جموں و کشمیر پردیش کانگریس کمیٹی کے صدر سیف الدین سو

سرینگر 25 ڈسمبر (سیاست ڈاٹ کام) جموں و کشمیر میں تشکیل حکومت کے مسئلہ پر تعطل برقرار ہے۔ کانگریس ریاستی یونٹ نے آج پی ڈی پی کے بانی مفتی محمد سعید کی زیرقیادت نئی حکومت تشکیل دینے کی پرزور حمایت کی اور کہاکہ کانگریس جموں و کشمیر اسمبلی انتخابات میں عوام کے فیصلہ کا احترام کرتی ہے۔ جموں و کشمیر پردیش کانگریس کمیٹی کے صدر سیف الدین سوز نے یہاں ایک بیان میں کہاکہ ریاست میں تشویشناک صورتحال اُبھر رہی ہے۔ بعض اقتدار کی لالچی طاقتیں حکومت سازی کے لئے کوشاں ہیں۔ انفرادی طور پر بھی کئی لوگ عوام کے جمہوری فیصلے کو ناکام بنانے کی کوشش کررہے ہیں۔ ریاستی اسمبلی انتخابات میں عوام نے اپنی مرضی سے امیدواروں کو منتخب کیا ہے تو اِن کی توقع کے مطابق حکومت بنائی جانی چاہئے۔ اُنھوں نے مزید کہاکہ دور اندیش، تجربہ کار اور مدبر سیاستداں جیسے مفتی محمد سعید کو ریاست میں ایک مخلوط حکومت کی قیادت کرنے کا موقع دیا جانا چاہئے اور ہمخیال پارٹیوں کی حمایت یا گروپس کی تائید انھیں حاصل ہے۔ اِسی طرز پر عوام کے فیصلے کا حقیقی احترام ہوگا۔ سیف الدین سوز نے بظاہر بی جے پی اور نیشنل کانفرنس کی قیادت کے درمیان بھی ملاقاتوں کا حوالہ دیتے ہوئے کہاکہ ریاست میں معیوب سیاسی حالات پیدا ہورہے ہیں جبکہ بی جے پی جنرل سکریٹری رام مادھو نے نیشنل کانفرنس کی قیادت سے ملاقات کی تردید کی۔ نئی دہلی میں نیشنل کانفرنس کی قیادت سے بی جے پی قائدین کی ملاقات کے بارے میں آنے والی خبروں کو بے بنیاد قرار دیتے ہوئے رام مادھو نے اپنے مائیکرو بلاگنگ ویب سائٹ ٹیوٹر پر اِس کی تردید کی ہے۔ نیشنل کانفرنس کے کارگذار صدر و سبکدوش ہونے والے چیف منسٹر عمر عبداللہ نے بھی مادھو کے اِس ٹوئٹر بیان پر اپنا بیان بھی ٹوئٹ کیا ہے۔ عمر عبداللہ نے کہاکہ میں ریاست کی بہتر سیاسی صورتحال کو درہم برہم کرنا نہیں چاہتا۔ میں نے اپنے دورہ انگلینڈ کو منسوخ کردیا ہے اور ریاست کی صورتحال پر نظر رکھی ہے۔

TOPPOPULARRECENT