Sunday , November 19 2017
Home / ہندوستان / جموں ڈگری کالج میں طالب علم کی اچانک موت

جموں ڈگری کالج میں طالب علم کی اچانک موت

طلبہ کااحتجاج ، سنگباری میں 8 زخمی ، عسکریت پسندی کے شکار نوجوان کا جلوس جنازہ
سرینگر 21 اگسٹ (سیاست ڈاٹ کام) جموں کے ضلع راجوری میں آج کالج میں طالب علم کی موت کے بعد ڈسٹرکٹ ہاسپٹل کے روبرو سنگباری کا واقعہ پیش آیا جس میں چھ ملازمین پولیس بشمول دو عہدیدار اور دیگر 8 زخمی ہوگئے ۔ سینئر پولیس عہدیدار نے بتایا کہ موصولہ اطلاعات کے مطابق ڈگری کالج راجوری کا طالب علم تنویر حسین بیہوش ہوکر گر پڑا ۔ اُس ڈسٹرکٹ ہاسپٹل منتقل کیا گیا ۔ یہاں ڈاکٹرس نے اُسے مردہ قرار دیا۔ پولیس کی ٹیم جب ہاسپٹل پہونچی اور نعش کو ورثاء کے حوالے کرنے سے قبل ضابطہ کی تکمیل کی جارہی تھی اُس وقت چند طلبہ اور دیگر نے سڑک پر دھرنا منظم کیا اور ہاسپٹل سے نعش منتقل کرنے کیلئے ایمبولینس کی عدم دستیابی کا الزام عائد کرتے ہوئے احتجاج شروع کردیا۔ ڈپٹی سپرنٹنڈنٹ پولیس نے یہاں پہونچ کر احتجاجیوں کو خاموش کرنے کی کوشش کی ، اس دوران احتجاجیوں نے سنگباری شروع کردی ۔ پولیس نے اُنھیں منتشر کرنے کیلئے طاقت کاا ستعمال کیا۔ ایک اور واقعہ میں سینکڑوں افراد نے ایک کیبل آپریٹر کی تدفین میں شرکت کی جو عسکریت پسندوں کے ہاتھوں کشمیر کے ضلع شوپیان میں ہلاک کردیا گیا تھا۔ ہلال احمد ملک کل گھر سے شوپیان کے راستے روانہ ہوا تھا جبکہ اُسے ہلاک کردیا گیا۔ اُس کی نماز جنازہ جامع مسجد میں ادا کی گئی۔ وادیٔ کشمیر میں ایسے افراد کی تدفین عاجلانہ بنیادوں پر کی جاتی ہے۔ آج کثیر تعداد میں ملک کے جلوس جنازہ میں شرکت سے عسکریت پسندوں کو یہ پیغام پہنچا ہے کہ عوام اِس نوعیت کی ہلاکتوں کے مخالف ہیں۔ پولیس کے بموجب اُسے زبیر احمد ترے اور عمر نظیر نامی عسکریت پسندوں نے ہلاک کیا ہے۔ پولیس کے ترجمان کے بموجب حملہ آوروں کی تلاش جاری ہے۔ جموں سے موصولہ اطلاع کے بموجب اچانک سیلاب آجانے سے ایک سات سالہ لڑکا ضلع اودھم پور کی دریا میں غرق ہوگیا جبکہ دیگر دو لڑکیوں کو بچالیا گیا۔ غرق ہونے والے کی شناخت بطور نریندر کی گئی ہے۔ دریں اثناء ریاست جموں و کشمیر اور پاکستانی مقبوضہ کشمیر کی سرحد پر پھنسے ہوئے 116 پاکستانی شہری آج اپنے گھروں کو روانہ کردیئے گئے۔ وہ پونچھ ۔ راول کوٹ خطہ قبضہ کے پار کی بس خدمات معطل ہوجانے کی وجہ سے گزشتہ ایک ماہ سے یہاں پھنسے ہوئے تھے۔ لداخ اسکاؤٹس کو جموں میں صدرجمہوریہ ہند نے کلرس عطا کئے۔ وہ ایک روزہ دورہ پر لیہہ پہنچے تھے۔ دریں اثناء سرینگر سے موصولہ اطلاع کے بموجب فوج نے وسطی کشمیر کے ضلع گندربل میں کنگن کے علاقے میں عسکریت پسندوں کا ایک خفیہ ٹھکانہ دریافت کیا۔ پولیس کے بموجب اِس خفیہ ٹھکانے سے کثیر مقدار میں گولہ بارود ضبط کئے گئے۔

TOPPOPULARRECENT