Thursday , June 21 2018
Home / شہر کی خبریں / جناپالانہ اور یواپدتھم تحریک شروع کرنے کا اعلان

جناپالانہ اور یواپدتھم تحریک شروع کرنے کا اعلان

حیدرآباد ۔ 24 جنوری (سیاست نیوز) قومی سطح پر عام آدمی پارٹی نے کامیابی حاصل کرتے ہوئے جہاں سیاسی حلقوں میں ہلچل مچادی وہی سارے ملک میں تبدیلی کی لہر دوڑ گئی ہے۔ عام آدمی بالخصوص جہدکاروں میں نیا حوصلہ پیدا ہوا ہے۔ ریاست آندھراپردیش میں ان دنوں ایک ایسی جماعت جو سیاست سے اپنے آپ کو دور رکھے ہوئے ہے، بدعنوانیوں سے پاک سماج کی تشکیل کیل

حیدرآباد ۔ 24 جنوری (سیاست نیوز) قومی سطح پر عام آدمی پارٹی نے کامیابی حاصل کرتے ہوئے جہاں سیاسی حلقوں میں ہلچل مچادی وہی سارے ملک میں تبدیلی کی لہر دوڑ گئی ہے۔ عام آدمی بالخصوص جہدکاروں میں نیا حوصلہ پیدا ہوا ہے۔ ریاست آندھراپردیش میں ان دنوں ایک ایسی جماعت جو سیاست سے اپنے آپ کو دور رکھے ہوئے ہے، بدعنوانیوں سے پاک سماج کی تشکیل کیلئے جہد کا آغاز کردیا ہے۔ دولت سے سیاست اور اثرورسوخ و دبدبہ کو سیاست سے دور رکھتے ہوئے مضبوط جمہوری نظام کو قائم کرنے کا ارادہ رکھنے والے یہ جہد کار ’’جفا پالوتہ‘‘ (عوامی اقتدار) کے نام سے ایک پلیٹ فام پر جمع ہوگئے ہیں اور نوجوان نسل کو اپنی تحریک میں شامل کرتے ہوئے ’’جنا پالانہ اور یواپدتھم‘‘ کے نام سے اپنی تحریک کو شروع کردیا۔ اس خصوص میں جنا پالانہ کے کنوینر مسٹر پالم سریکانت ریڈی نے پریس کانفرنس کو مخاطب کرتے ہوئے جناپالانہ کے اغراض و مقاصد کو بیان کیا اور کہا کہ یہ تنظیم جہدکاروں کا محاذ ہے اور یہاں مختلف شعبہ حیات میں خدمات انجام دینے والے افراد شامل ہیں۔ مسٹر پالم سریکانت ریڈی نے بتایا کہ این جی اوز سرکاری ملازمین، دانشوروں اور ماہرین اعلیٰ تعلیم یافتہ افراد اور نوجوان جناپالانہ کے نعرہ سے ایک جگہ جمع ہورہے ہیں۔ انہوں نے بتایا کہ دولت مند افراد کی حکومت یا پھر جمہوریت پسندوں کی حکومت دونوں میں ایک جو ملک کیلئے سازگار ہے اس کا فیصلہ عوام کرے گی اور عوام میں اس تعلق سے شعور بیدار کیا جائے گا۔ انہوں نے بتایا کہ اگر دولت کو سیاست سے دور کردیا جائے تو پھر تمام مسئلہ کا حل یقینی ہوجائے گا چونکہ دولت کے دم پر سیاست کو اپنے اختیار میں کرتے ہوئے مخالف عوام حکومتیں چلائی جارہی ہیں۔

انہوں نے کہا کہ جابرانہ طرز حکومت کے رجحانات دن بہ دن زور پکڑتے جارہے ہیں۔ انہوں نے بتایا کہ جناپالانہ ایک ایسے سماج کی تشکیل پر زور دے رہا ہے جہاں دولت اور اس کی مدد سے تشکیل پانے والی حکومتیں اقتدار سے دور ہیں اور اس نعرہ کو عوام کی جانب سے کافی تقویت و مقبولیت مل رہی ہے۔ انہوں نے بتایا کہ مذہب دولت علاقائی مرتبت سے بالاتر ہوکر سماج کیلئے سماج سے آنے والے عوام کے درمیان رہنے والے افراد کو اس کا حصہ بنایا جارہا ہے۔ مسٹر پالم سریکانت ریڈی نے بتایا کہ تاحال جناپالانہ ریاست کے 15 اضلاع میں سرگرم عمل ہے۔ ضلع ہیڈکوارٹر منڈل اور دیہی سطح پر عوامی اجلاس اور مباحثہ سے تحریک کا آغاز کیا گیا ہے۔ انہوں نے بتایا کہ چونکہ تبدیلی کا رجحان عوام میں پیدا ہوگیا ہے اسی دوران بہتر کوشش عوام کے حق میں ثابت ہوسکتی ہے۔ انہوں نے بتایاکہ جناپالانہ انتخابات کے دوران دولت بانٹنے والوں پر اور بدعنوانیوں میں ملوث اقدار پر خصوصی توجہ مرکوز کرے گا اور ان کا تعاقب کیا جائے گا۔ اس کام کیلئے جناپالانہ نے سوشیل میڈیا کی مدد حاصل کرنے کا فیصلہ کیا ہے۔ انتخابات کے دوران رقم و شراب تقسیم کرنے والوں کی ہر اطلاع کو سیکنڈس میں فیس بک اور ٹیوٹر پر جاری کیا جائے گا۔ انہوں نے بتایا کہ اس تحریک کا اہم مقصد سیاست کو پاک کرنا ہے اور مثالی جمہوری نظام کو قائم کرنا ہے جو ہر شہری کیلئے بہتر اور ہر شہری کا پسندیدہ نظام ثابت ہو۔ انہوں نے بتایا کہ جناپالانہ کا پہلا پروگرام 25 جنوری کے دن ضلع اننت پور میں رکھا جائے گا۔ اس موقع پر مسٹر ارون آئی آئی ٹی گوگپور، ویدا کماری ریٹائرڈ اکاونٹنٹ جنرل (وی آر ایس یافتہ) مسٹر لکشمن راؤ ، این جی او ضلع محبوب نگر، مسٹر ڈاکٹر وجے کمار، اننت پور، مسٹر وینکٹیش بی سی لیڈر میدک و دیگر موجود تھے۔

TOPPOPULARRECENT