Monday , June 25 2018
Home / شہر کی خبریں / جنسی استحصال کو ختم کرنے خواتین میں تعلیم کو عام کرنے کی ضرورت

جنسی استحصال کو ختم کرنے خواتین میں تعلیم کو عام کرنے کی ضرورت

مہیلا دیکشا سمیتی کی سلور جوبلی تقریب ، نائب صدر جمہوریہ کا خطاب و رسم اجراء کتاب
حیدرآباد۔30مارچ(سیاست نیوز) نائب صدر جمہوریہ ہند ایم وینکیا نائیڈو نے کہاکہ عورت کا تعلیمی یافتہ ہونا گویا ایک خاندان اور پورے معاشرے کو تعلیم سے جوڑنے کے مترادف ہے اور وہ تمام ادارے ‘ تنظیمیں قابل ستائش ہیں جو عورتوں کی تعلیم کے لئے سرگرم ہیں بالخصوص غریب طبقات کی لڑکیوں کو تعلیمی یافتہ بنانے کاکام کررہے ہیں۔ وہ آج یہاں حیدرآباد میں مہیلا دکشتا سمیتی کی سلور جوبلی تقریب سے مخاطب تھے۔گورنر گوا مردیولہ سنہا ‘نائب وزیر اعلی الحاج محمدمحمودعلی ‘ رکن پارلیمنٹ چیوڑلہ ویشویشو ار ریڈی‘ رکن اسمبلی اے گاندھی اور دیگر نے بھی خطاب کیا جبکہ سمیتی کی صدر سروج بجاج نے نگرانی کی۔خطاب کے سلسلے کو جاری رکھتے ہوئے مسٹر نائیڈو نے کہاکہ ملک میں عورتوں کی تعلیم کا تناسب بہت کم ہے اور مہیلا دکشتا سمیتی کے ٹرسٹیوں کی جانب سے عورتوں او ربالخصوص غریب طبقات سے تعلق رکھنے والی لڑکیوں کو تعلیم فراہم کرنے کا جو کام کیاجارہا ہے جو قابل ستائش ہے۔ملک میں خاتون کو تعلیمی یافتہ بنانا ضروری ہے تاکہ جنسی امتیاز اور انصاف کو یقینی بنایاجاسکے۔کمزور خاندانی نظام ‘ طلاق‘ گھریلو تشدد ‘ جنسی استحصال کے بڑھتے واقعات کو ختم کرنے کے لئے خواتین میںتعلیم کو عام کرنے کی ضرورت ہے ‘ جو جنسی استحصال کو ختم کرنے اور انصاف کو یقینی بنانے میں بھی معاون ثابت ہوگا۔مسٹر نائیڈو نے کہاکہ خواتین او رلڑکیوں کو تعلیم سے دورکھنے کی سونچ کے حامل شیطان صفت لوگوں پر شکنجہ کسنے کی بھی ضرورت ہے۔ انہوں نے کہاکہ ہمیں اپنی مادری زبان پر توجہہ دینے کی ضرورت ہے اور وہی تعلیم کامیاب او رکارگرد ثابت ہوتی ہے جو مادری زبان کے ذریعہ حاصل کی جاتی ہے۔اس موقع پر سمیتی کے شمارے کی بھی رسم اجرائی نائب صدر جمہوریہ کے ہاتھوں عمل میںائی ۔

TOPPOPULARRECENT