Thursday , November 23 2017
Home / دنیا / جنسی غلامی قبول کرنے سے انکار پر 250 لڑکیوں کا قتل

جنسی غلامی قبول کرنے سے انکار پر 250 لڑکیوں کا قتل

لندن ۔ 21 اپریل (سیاست ڈاٹ کام) داعش گروپ نے ایک حالیہ رپورٹ کے مطابق شمالی عراق میں 250 لڑکیوں کو اس لئے موت کے گھاٹ اتار دیا کیونکہ انہوں نے داعش جنگجوؤں کے جنسی غلام بننے سے انکار کردیا تھا۔ لڑکیوں سے کہا گیا تھا کہ وہ داعش کے جنگجوؤں کے ساتھ عارضی طور پر نکاح کرلیں تاہم جس لڑکی نے بھی نکاح سے انکار کیا اسے قتل کردیا گیا۔ کبھی کبھی انکار کرنے والی لڑکی کے ارکان خاندان کو بھی موت کے گھاٹ اتار دیا گیا۔ موصل میں دولت اسلامیہ نے جس وقت قبضہ کیا تھا انہوں نے وہاں کی خوبصورت دوشیزاؤں پر نظر رکھی تھی۔ اسی دوران کرد ڈیموکریٹک پارٹی ترجمان سعید مامونرنی نے بتایا کہ لڑکیوں کو انتباہ دیا گیا تھا کہ اگر انہوں نے انکار کیا تو انہیں موت کے گھاٹ اتار دیا جائے گا۔ مرتا کیا نہ کرتا کے مصداق کئی لڑکیوں نے ہتھیار ڈال دیئے۔ تاہم کچھ لڑکیاں جو نڈر اور بیباک تھیں انہوں نے داعش جنگجوؤں کی جنسی ہوش کا نشانہ بننے سے انکار کردیا جس کا نتیجہ ان کی موت کی شکل میں ظاہر ہوا۔ ایسی 250 لڑکیاں ہیں جنہیں موت کے گھاٹ اتارا گیا اور کچھ لڑکیوں کو ان کے ارکان خاندان کے ساتھ موت کی نیند سلادیا گیا۔

TOPPOPULARRECENT