Thursday , September 20 2018
Home / دنیا / جنوبی افریقہ انتخابات کیلئے تیار ،اے این سی کی دوبارہ کامیابی متوقع

جنوبی افریقہ انتخابات کیلئے تیار ،اے این سی کی دوبارہ کامیابی متوقع

جوہانسبرگ 6 مئی (سیاست ڈاٹ کام )کرپشن اور بیروزگاری کے سلسلہ میں موجودہ حکومت کے خلاف وسیع پیمانے پر پھیلی ہوئی ناراضگی کے باوجود امکان ہیکہ ملک کے پانچویں جمہوری انتخابات میں جن کیلئے کل رائے دہی مقرر ہے برسر اقتدار افریقن نیشنل کانگریس ایک بار پھر کامیابی حاصل کرلے گی۔جنوبی افریقہ میں مخالف نسل پرستی افسانوی شخصیت نیلسن منڈیلا

جوہانسبرگ 6 مئی (سیاست ڈاٹ کام )کرپشن اور بیروزگاری کے سلسلہ میں موجودہ حکومت کے خلاف وسیع پیمانے پر پھیلی ہوئی ناراضگی کے باوجود امکان ہیکہ ملک کے پانچویں جمہوری انتخابات میں جن کیلئے کل رائے دہی مقرر ہے برسر اقتدار افریقن نیشنل کانگریس ایک بار پھر کامیابی حاصل کرلے گی۔جنوبی افریقہ میں مخالف نسل پرستی افسانوی شخصیت نیلسن منڈیلا نے سفید فاموں کے برسوں اقتدار کے بعد 1994 میں پہلی بار زمام اقتدار سنبھالی تھی۔افریقن نیشنل کانگریس کو ایک بار پھر انتخابی کامیابی حاصل کرنے والی پارٹی اور جیکب زوما کو دوسری معیادکیلئے صدر منتخب ہونے والا سمجھا جارہا ہے ۔ حالانکہ تجزیہ نگاروں کو توقع ہے کہ 2009 میں منعقدہ گذشتہ انتخابات کی بہ نسبت اس بار پارٹی کو کم تعداد میں ووٹ حاصل ہوں گے ۔ جیکب زوما کی پہلی معیاد کرپشن ،ناقص حکمرانی کے الزامات اور بعض اوقات پر تشدد احتجاجی مظاہروں سے بھر پور رہی کیونکہ بنیادی خدمات فراہم کرنے سے بھی حکومت قاصر رہی تھی۔ تاہم افریقن نیشنل کانگریس کا غلبہ برقرار ہے اور اپوزیشن بری طرح منتشر ہے جس کی وجہ سے اس کے دوبارہ منتخب ہونے کی توقع کی جارہی ہے ۔

جولیس مالیما نے جو افریقن نیشنل کانگریس سے قطع تعلق کر کے اپنی علحدہ پارٹی معاشی آزادی مجاہدین پارٹی قائم کرچکے ہیں ۔بیروزگاری اور اثاثہ جات کو قومیا کر خدمات پر قبضہ کرلینے کے سرکاری اقدام کے خلاف شعلہ بیانی کررہے ہیں لیکن انہیں صرف نوجوانوں کی تائید حاصل ہورہی ہے امکان ہے کہ وہ کافی تعداد میں پارلیمنٹ کی نشستیں حاصل کرلیں گے ۔ طاقتور ترین اپوزیشن جمہوری محاز جس کی قیادت ہیلن زلے کرتی ہیںبری طرح انتشار کا شکار ہیں۔ تاہم ابتدائی ناکامیوں کے بعد دوبارہ اپنے قدم جما رہا ہے ۔ 2014 کے انتخابات میں پہلی بار جنوبی افریقہ کی آزاد کے بعد پیدا ہونے والے رائے دہندے اپنا ووٹ استعمال کریں گے ۔ملک میں جملہ 2 کروڑ 40 لاکھ اہل رائے دہندے ہیں۔

TOPPOPULARRECENT