Wednesday , December 13 2017
Home / Top Stories / جنوبی ایشیاء کے امن کو خطروں میں اضافہ ، سشماکاادعا

جنوبی ایشیاء کے امن کو خطروں میں اضافہ ، سشماکاادعا

وزیرخارجہ امریکہ سے باہمی مسائل پر تبادلہ خیال، وزیرخارجہ پاکستان سے نیک خواہشات کا تبادلہ
نیویارک ۔ 22 ستمبر (سیاست ڈاٹ کام) جنوبی ایشیاء کے امن اور استحکام کو درپیش خطروں میں اضافہ ہوتا جارہا ہے۔ وزیرخارجہ سشماسوراج نے آج واضح طور پر پاکستان کا حوالہ دیتے ہوئے یہ دعویٰ کیا۔ 72 ویں اقوام متحدہ کی جنرل اسمبلی اجلاس کے موقع پر علحدہ طور پر سارک چوٹی کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے سشماسوراج نے کہا کہ خوشحالی، ربط اور تعاون صرف امن اور سلامتی کے ماحول میں پروان چڑھتا ہے۔ تاہم اس کا مطلب یہ ہیکہ اس علاقہ کو سنگین خطرہ لاحق ہے۔ خطروں میں دن بہ دن اضافہ ہوتا جارہا ہے۔ انہوں نے کہاکہ ضروری ہیکہ یہ علاقہ برقرار رہے اور ہم دہشت گردی کی لعنت کو اس کی تمام اشکال میں ختم کردیں اور اس سلسلہ میں کسی فرق و امتیاز سے کام نہ لیں۔ ماحولیاتی نظام اس کی تائید ختم ہوجانے کی وجہ سے تباہ ہورہا ہے۔ وہ سارک وزرائے خارجہ کی چوٹی کانفرنس میں تقریر کررہی تھیں۔ قبل ازیں انہوں نے وزیرخارجہ امریکہ ٹلرسن سے ملاقات کی اور باہمی دلچسپی کے امور پر تبادلہ خیال کیا۔ وزیرخارجہ پاکستان خواجہ آصف سے انہوں نے خیرت دریافت کی اور نیک خواہشات کا تبادلہ کیا۔ ٹرمپ انتظامیہ فی الحال H1B ویزا پالیسی پر نظرثانی کررہا ہے اور جیسا کہ اس کا خیال ہیکہ امریکی کارکنوں کی جگہ دیگر افراد کو لینے کیلئے کمپنیاں اس ویزا کا استحصال کررہی ہیں۔ وزارت خارجہ ہند کے ترجمان رویش کمار نے اپنے ٹوئیٹر پر تحریر کیا کہ عالمی دفاعی شراکت داری میں مزید گہرائی پیدا کرتے ہوئے وزیرخارجہ سشماسوراج نے وزیرخارجہ امریکہ ریکس ٹلرسن سے ملاقات کی۔ دونوں وزرائے خارجہ نے باہمی تعلقات کے تمام پہلوؤں پر تبادلہ خیال کیا۔

TOPPOPULARRECENT