Tuesday , October 23 2018
Home / شہر کی خبریں / جنگاوں جھیل پر قبضہ کی اطلاعات بے بنیاد

جنگاوں جھیل پر قبضہ کی اطلاعات بے بنیاد

کلکٹر پر حکومت کی ہدایت کے خلاف کام کرنے کا الزام ‘ رکن اسمبلی
حیدرآباد ۔21۔ نومبر (سیاست نیوز) ٹی آر ایس کے رکن اسمبلی جنگاؤں یادگیری ریڈی نے جھیل پر قبضہ سے متعلق میڈیا میں دکھائی جارہی خبروںکو بے بنیاد قرار دیا۔ میڈیا سے بات چیت کرتے ہوئے یادگیری ریڈی نے کہا کہ ان کی جانب سے جھیل پر قبضہ کی اطلاعات حقائق سے بعید ہے۔ انہوں نے کہا کہ حکومت کی جانب سے قبضہ کی جانچ کے سلسلہ میں کوئی کمیٹی تشکیل نہیں دی گئی جس کا بعض گوشوں کی جانب سے دعویٰ کیا جارہا ہے ۔ انہوں نے بتایا کہ جنگاؤں جھیل کو خوبصورت بنانے حکومت اقدامات کر رہی ہے اور اس سلسلہ میں کل جماعتی کمیٹی کی تجاویز کے مطابق مقامی ضرورتوں کو دیکھتے ہوئے جنگاؤں جھیل کی ترقی اور اسے خوبصورت بنانے کا فیصلہ کیا گیا ۔ انہوں نے کہا کہ جنگاؤں جھیل کی اراضی پر کوئی قبضہ نہیں ہوا بلکہ جھیل میں توسیع ہوئی ہے۔ انہوں نے بتایا کہ قانون ساز کونسل میں ڈپٹی چیف منسٹر محمد محمود علی نے جھیل میں توسیع کے سلسلہ میں واضح بیان دیا۔ بعض افراد جان بوجھ کر انکے خلاف مہم چلا رہے ہیں تاکہ امیج کو متاثر کیا جائے۔ یادگیری ریڈی نے کلکٹر سے اختلافات کی تردید کی اور کہا کہ ریاستی وزراء ہریش راؤ اور کڈیم سری ہری نے جھیل کا دورہ کیا۔ چیف منسٹر چندر شیکھر راؤ نے جھیل کے کاموں کی عاجلانہ تکمیل کی ہدایت دی ۔ انہوں نے کہا کہ سدی پیٹ کے کومٹی جھیل کی طرح جنگاؤں جھیل کو ترقی دی جائیگی۔ انہوں نے الزام عائد کیا کہ متعلقہ کلکٹر دستور کے برخلاف کام کر رہے ہیں۔ اس سلسلہ میں چیف سکریٹری سے شکایات کی جاچکی ہے ۔ انہوں نے کہا کہ کلکٹر کو ان کاموں کی تکمیل کا کوئی تجربہ نہیں ہے اور وہ حکومت کی تجویز کے خلاف کام کر رہے ہیں۔ رکن اسمبلی نے کہا کہ اگر اس معاملہ میں وہ قصوروار پائے جائیں تو حکومت ان کے خلاف کارروائی کرسکتی ہے ۔

TOPPOPULARRECENT