Thursday , November 23 2017
Home / اضلاع کی خبریں / جنگلی جانوروں کی خریدو فروخت کا ریاکٹ بے نقاب

جنگلی جانوروں کی خریدو فروخت کا ریاکٹ بے نقاب

فاریسٹ آفیسر محمد خواجہ ہدایت علی کا جرأتمندانہ اقدام، ایک شخص گرفتار، تین فرار
بھینسہ۔/4مئی، ( سیاست ڈسٹرکٹ نیوز) بھینسہ ڈیویژن کے مختلف مواضعات میں گزشتہ کئی دنوں سے ہرن اور دیگر جنگل کے جانوروں کی غیر قانونی خرید و فروختگی کا بڑے پیمانے پر کاروبار عروج پر چل رہا ہے جنگل کے جانوروں کو رات کے اوقات میں مختلف ہتھیاروںکے ذریعہ شکار کرتے ہوئے پکڑ کر بھاری قیمت میں شکاریوں کی جانب سے فروخت کیا جارہا ہے، جس کی اطلاع پاکر نرمل فاریسٹ ریجنل آفیسر محمد خواجہ ہدایت علی نے دلیرانہ مظاہرہ کرتے ہوئے ان غیر قانونی اسمگلنگ کرنے والے گروہوں کو پکڑنے کیلئے انتہائی اقدامات انجام دیتے ہوئے ایک فرد کو گرفتار کیا۔ تفصیلات کے بموجب بھینسہ ڈیویژن کے لوکیشورم منڈل کے پسپور موضع کے قریبی تانڈے لکشمی نگر میں چند افراد ہرنوں کی غیر قانونی طور پر فروختگی ( اسمگلنگ ) کررہے تھے، جس کی اطلاع پاکر نرمل ریجنل فاریسٹ آفیسر محمد خواجہ ہدایت علی نے لوکیشورم منڈل کے تانڈوں کا دورہ کرتے ہوئے ناگیندر سے تفصیلات حاصل کی اور کچھ ہی دوری پر اس کے کھیت میں موجود تین ہرنوں کو اپنی تحویل میں لینے کیلئے بہت ہی ہوشیاری کے ساتھ بھینسہ اور نرسا پور کے ڈپٹی ریجنل فاریسٹ آفیسر محمد عبدالحفیظاور شیلانند کے علاوہ دیگر محکمہ جنگلات کے عملے کو تانڈہ طلب کرتے ہوئے غیر قانونی ہرنوں کی فروختگی میں ملوث ناگیندر کو گرفتار کرلیا جبکہ اس کے گروہ کے تین افراد نے راہ فرار اختیار کرلی۔ محکمہ جنگلات کے عہدیداران نے گرفتار شدہ ناگیندر پر مقدمہ درج کرتے ہوئے بھینسہ  جونیر سیول کورٹ کی تحویل میں دے دیا جسے جوڈیشیل ریمانڈ بھیج دیا گیا اور محکمہ جنگلات کے عہدیداران نے ان ہرنوں کے چھوٹے بچوں کو جنارم میں واقع ہرن فارم ہاوز منتقل کرنے اقدامات کررہے ہیں۔ واضح رہے کہ گرفتار شدہ مذکورہ شخص سال 2013 میں بھی جنگل کے جانوروں کی غیر قانونی فروختگی میں ملوث پاکر جوڈیشیل ریمانڈ کیا جاچکا ہے لیکن اس کے باوجود بھی اس غیر قانونی کاروبار میں ملوث ہے۔

TOPPOPULARRECENT