Monday , July 16 2018
Home / Top Stories / جواپنی سیٹ نہیںبچاسکتا اُسے بڑا عہدہ دینا خودکشی کے مترادف

جواپنی سیٹ نہیںبچاسکتا اُسے بڑا عہدہ دینا خودکشی کے مترادف

ضمنی انتخابات میں شرمناک شکست کے بعد سبرامنیم سوامی کا طنزیہ ریمارک

نئی دہلی15 مارچ (سیاست ڈاٹ کام) اترپردیش کی دوسیٹوں پر ہوئے ضمنی انتخاب میں بھارتیہ جنتاپارٹی (بی جے پی ) کی شکست فاش کے بعد اپوزیشن کے نشانے پرآئی اترپردیش کی یوگی آدتیہ ناتھ حکومت پر اپنے بھی نکتہ چینی کرنے لگے ہیں۔ پارٹی کے سینئرلیڈر اور رکن پارلیمان سبرامنیم سوامی نے تو اشاروں اشاروں میں وزیر اعلی پر حملہ کرتے ہوئے یہاں تک کہہ دیا کہ جو لیڈر اپنی سیٹ پر جیت نہیں دلا سکتا اسے بڑاعہدہ دینا جمہوریت میں خودکشی کرنے جیسا ہے۔بہار اور اترپردیش میں لوک سبھا کی تین سیٹوں پر ہوئے ضمنی انتخاب میں بی جے پی کو شکست فاش ہوئی ہے۔ بی جے پی گورکھپور پارلیمانی سیٹ جو یوگی آدتیہ ناتھ کا حلقہ ہے وہاں سماج وادی پارٹی کے ہاتھوںشکست ہوئی۔ اس سے پہلے یوگی آدتیہ ناتھ اس سیٹ سے مسلسل پانچ بار ایم پی رہ چکے ہیں۔ اس کے علاوہ پھولپور جہاں سے نائب وزیراعلی کیشو پرساد موریہ ایم پی رہے ہیں بی جے پی کو وہاں بھی ایس پی کے ہاتھوں شکست کا سامنا کرنا پڑا ہے۔ بہارکی ارریہ سیٹ سے راشٹریہ جنتادل کامیاب ہوا ہے۔ سوامی نے ایک ٹیلی ویژن چینل سے بات چیت میں یوگی آدتیہ ناتھ پر اشاروں میں حملہ کیا۔انھوں نے کہا’’جو لیڈر اپنی سیٹ پر جیت نہیں دلاسکتے ،ایسے لیڈروں کو بڑا عہدہ دینا جمہوریت میں خودکشی کرنے کے مترادف ہے۔عوام میں جو مقبول ہے ،وہ کسی عہدے پر نہیں ہے۔ میراماننا ہے کہ ان سب چیزوں کو درست کرنے کے لئے اب بھی وقت ہے۔‘‘بہار کے پٹنہ صاحب سے رکن پارلیمان اور کافی عرصہ سے پارٹی کو نشانہ بنا رہے شتروگھن سنہا نے بھی موقع ہاتھ سے نہیں جانے دیا۔ انھوں نے ٹویٹ کیا’’سر ،یوپی بہار کے ضمنی انتخابات کے نتائج نے آپکو اور ہمارے لوگوں کو یہ احساس کرادیا ہوگا کہ سیٹ بیلٹ باندھنی ہوگی۔ آگے مشکل وقت ہے۔ امید ہے کہ مستقبل میں ہم اس بحران سے نمٹ سکیں گے۔جتنی جلدی ہم اس مسئلہ کو حل کرسکیں گے بہتر ہوگا۔ یہ نتیجے سیاسی مستقبل کے بارے میں بھی بتاتے ہیں ،اسے ہلکے میں نہیں لیاجا سکتا۔ ‘‘

TOPPOPULARRECENT