جونیر ڈاکٹروں کی ہڑتال ختم

حیدرآباد۔/2جولائی، ( پی ٹی آئی) حیدرآباد میں جونیر ڈاکٹرس نے آج تلنگانہ حکومت کے تیقن پر اپنی ہڑتال کو ختم کردیا۔ ریاستی حکومت نے دواخانوں کے احاطہ میں موثر سیکوریٹی کی فراہمی کے علاوہ جونیر ڈاکٹروں کے دیگر تمام مطالبات پر سنجیدگی کے ساتھ کارروائی کرنے کا تیقن دیا ہے۔ ریاستی وزیر داخلہ این نرسمہا ریڈی اور وزیر صحت ٹی راجیا نے ہڑتال

حیدرآباد۔/2جولائی، ( پی ٹی آئی) حیدرآباد میں جونیر ڈاکٹرس نے آج تلنگانہ حکومت کے تیقن پر اپنی ہڑتال کو ختم کردیا۔ ریاستی حکومت نے دواخانوں کے احاطہ میں موثر سیکوریٹی کی فراہمی کے علاوہ جونیر ڈاکٹروں کے دیگر تمام مطالبات پر سنجیدگی کے ساتھ کارروائی کرنے کا تیقن دیا ہے۔ ریاستی وزیر داخلہ این نرسمہا ریڈی اور وزیر صحت ٹی راجیا نے ہڑتالی جونیر ڈاکٹروں سے بات چیت کی جس کے بعد انہوں ( ڈاکٹروں ) نے اپنی ہڑتال ختم کرنے کے فیصلہ کا اعلان کیا جو تین قبل ایک سرکاری ہاسپٹل میں چند فزیشینس پر حملے کے بعد شروع کی گئی تھی۔ ڈپٹی چیف منسٹر ٹی راجیا نے کہا کہ چند حملہ آور پہلے ہی گرفتار کئے جاچکے ہیں اور ڈاکٹروں کے مطالبہ کے مطابق دواخانوں میں سی سی ٹی وی لگائے جائیں گے۔ نرسمہا ریڈی نے جونیر ڈاکٹرس کو تیقن دیا کہ حکومت تمام میڈیکل پریکٹشنرس کو مکمل تحفظ فراہم کرے گی۔
اور اس بات کو یقینی بنایا جائے گاکہ مستقبل میں اس قسم کے حملوں کا اعادہ نہ ہوسکے۔ڈاکٹروں نے کہا کہ انہوں نے سیکورٹی کا مطالبہ کرتے ہوئے یہ ہڑتال کی تھی، انہیں سیکورٹی چاہیئے تاکہ عوام کی خدمت کرسکیں۔ ڈاکٹروں نے کہا کہ وہ فی الفور اپنی ڈیوٹی شروع کردیں گے۔

صدر نشین کے انتخاب میں ضابطوں کی پابندی: ہریش راؤ
حیدرآباد۔/2جولائی، ( این ایس ایس ) وزیر اُمور مقننہ ٹی ہریش راؤ نے آج دعویٰ کیا کہ تلنگانہ ریاستی قانون ساز کونسل کے چیرمین کے انتخاب میں تمام قواعد اور مروجہ ضابطوں کی پابندی کی گئی ہے۔ ہریش راؤ نے کہا یہاں اخباری نمائندوں سے بات چیت کرتے ہوئے کہا کہ چیرمین کونسل کے انتخاب کے شیڈول سے تمام ارکان کو 29جون کو ہی باخبر کردیا گیا تھا۔ انہوں نے کہا کہ وہ خود تمام ارکان پر یہ واضح کرچکے تھے کہ خفیہ رائے دہی کے طریقہ کار کے ذریعہ صدر نشین کونسل کا انتخاب عمل میں آئے گا تاہم حکومت ارکان کی جانب سے پیش کردہ تجاویز کے مطابق کوئی بھی تبدیلی کرنے کیلئے تیار ہے بشرطیکہ اسے ریاستی مقننہ کے ایوان بالا کے وقار میں اضافہ ہوسکتا ہے۔ہریش راؤ نے کہا کہ ایوان بالا کے ارکان نے کمزور طبقات سے تعلق رکھنے والے ایک شخص کو صدرنشین کونسل بنائے جانے پر خوشی کا اظہار کیا ہے لیکن ایوان کے چند ارکان نے مقننہ کے ضابطہ کو مسخ کرنے کی کوشش بھی کی ہے۔

TOPPOPULARRECENT