Saturday , November 18 2017
Home / بچوں کا صفحہ / جو دوسروں کا برا سوچتا ہے خود اس کے ساتھ برا ہوتا ہے

جو دوسروں کا برا سوچتا ہے خود اس کے ساتھ برا ہوتا ہے

ایک کسان نے ایک گدھا اور بکرا پال رکھا تھا ۔ کسان گدھے سے بہت کام لیتا‘ ہل چلانا ‘کنویں سے پانی کھینچنا ‘ سامان لاد کر شہر کے بازار جانا ہو یا کوئی اورکام کسان اور گدھا ہرجگہ ساتھ ساتھ جاتے ۔ کسان نرم دل آدمی تھا اس لئے مشقت کے ساتھ ساتھ اس کیلئے گھاس اور پانی کا بھی خیال رکھتا ۔ اکثر اپنے گدھے سے بات کرتے ہوئے کہتا تم ہی میرے سچے دوست ہو۔ بکرا کسان کی یہ باتیں سنتا رہتا تھا اور کسان کی ساری توجہ گدھے کی جانب دیکھ کر اس سے حسد کرتا ‘ بکرا چاہتا تھا کہ کسان گدھے کا خیال رکھنا چھوڑدے ۔
وہ کسان کوتو کچھ نہیں سمجھا سکتا تھا مگر گدھا بہت بھولا بھالا تھا اسے کسان سے بدظن کیا جاسکتا تھا۔ ایک دن بکرے نے گدھے سے کہا بھائی گدھے دیکھو مالک نے مجھے تو کھلا چھوڑ رکھا ہے ۔ میں جہاں چاہوں کھیل سکتا ہوں مگر مالک نے تمہیں پتہ نہیں کیوں باندھ کر رکھا ہوا ہے ۔ وہ تم پر سارا بوجھ لا دتا ہے اور تمہیں آرام بھی کرنے نہیں دیتا ۔ گدھا بولا ’’بکرے میاں تم ٹھیک کہتے ہوں ‘‘ کسان میرے کھانے پینے کا خیال رکھتا ہے مگر جانے کیوں وہ مجھے ہمیشہ باندھ کر رکھتا ہے اور آرام کرنے بھی نہیں دیتا ۔ تم ہی بتاؤ میں کیا کرسکتا ہوں ۔ بکرا بولا : یہ تو بہت آسان کام ہے ۔ ایسا کرو کسی گڑھے میں گرپڑو اور پھر مزے سے کچھ دن آرام کرو ۔ گدھا تو تھا ہی بے وقوف چالاک بکرے کی باتوں میں آگیا اور اسی دن جان بوجھ کر ایک گڑھے میں گر پڑا ۔ اب وہ اتنا زیادہ زخمی ہوگیا تھا کہ چل پھر نہ سکتا تھا ۔ کسان نے جانوروں کے ڈاکٹر کوبلایا ۔ ڈاکٹر نے گدھے کو دیکھا اور پھر کسان سے کہا کچھ دن تک اسے آرام کرنے دو ‘ کچھ دن میں ٹھیک ہوجائیگا ۔ اب کیا تھا مالک بکرے سے سارا کام کروانے لگا ۔ بکرا کام کرتے کرتے تھک گیا تھا ۔ اس نے ’من میں سوچا کہ میں نے گدھے کا برا کرنا چاہا اور اب میرے ساتھ ہی برا ہو رہا ہے ۔ جو دوسروں کا برا سوچتا ہے خود اس کے ساتھ برا ہوتا ہے ۔

TOPPOPULARRECENT