Sunday , December 17 2017
Home / ہندوستان / جڑواں ٹرین حادثہ کے مہلوکین کی تعداد 28 تک پہنچ گئی

جڑواں ٹرین حادثہ کے مہلوکین کی تعداد 28 تک پہنچ گئی

ریلوے پٹریوں کی مرمت اور متاثرین کی امداد کو اولین ترجیح ، ریلوے عہدیدار کا بیان

ہردا ( مدھیہ پردیش ) ۔ 6 ۔ اگست : ( سیاست ڈاٹ کام ) : ہردا کے قریب بیک وقت 2 ریل گاڑیاں پٹریوں سے اتر جانے کے حادثہ میں آج مزید 3 نعشیں برآمد ہونے کے بعد مہلوکین کی تعداد 28 تک پہنچ گئی ہے ۔ ویسٹ سنٹرل ریلوے جنرل مینجر مسٹر رمیش چندرا نے بتایا کہ بھوپال ریلوے ڈیویژن میں کھیرکھیہ اور بھیرنگی سیکشن کے درمیان پیش آئے حادثہ کے مقام سے مزید 3 نعشیں دستیاب ہوئی ہیں ۔ جس کے بعد مہلوکین کی تعداد 28 تک پہنچ گئی ہے ۔ انہوں نے بتایا کہ یہ نعشیں حادثہ کے مقام سے ایک کلومیٹر دور پائی گئیں ۔ اگرچیکہ 11 نعشیں بوگیوں کے اندر سے نکالی گئی ہیں لیکن باقیماندہ نعشوں کو جو کہ حادثہ کے مقام پر بکھری ہوئی تھیں ریلوے مسافرین تصور کرتے ہوئے متاثرین کی فہرست میں شامل کیا جائے گا ۔ مسٹر رمیش چندرا نے بتایا کہ جائے وقوع پر بچاؤ اور امداد کی کارروائی مکمل کرلی گئی ہے ۔

مسٹر رمیش چندرا نے بتایا کہ بادی النظر میں یہ حادثہ زبردست بارش کی وجہ سے پیش آیا ۔ جس میں 2 ٹرینیں ایک چھوٹے پل پر سے گذرتے وقت پٹریوں سے اتر گئی تھی ۔ یہ پٹریاں ندی میں طغیانی کے باعث زیر آب آگئی تھیں ۔ قبل ازیں یہ گمان کیا جارہا تھا کہ بادل پھٹے یا قریبی ڈیم سے اچانک پانی کے اخراج سے یہ حادثہ پیش آیا ہوگا ۔ لیکن ریاستی حکومت کے عہدیداروں سے بات چیت کے بعد یہ تصدیق ہوئی کہ موسلا دھار بارش ٹرین حادثہ کا سبب بن گئی کیوں کہ زور دار بارش سے پٹریوں کے نیچے کی سخت مٹی اور کنکریٹ بہہ گئے تھے ۔ جس کے نتیجہ میں دو ٹرینیں پٹریوں سے اتر گئے ۔ تاہم انہوں نے کہا کہ حادثہ کی اصل وجہ تحقیقات کے بعد ہی معلوم ہوگی ۔ جنرل منیجر نے بتایا کہ ریلوے پٹریوں کی مرمت اور درستگی کا کام جنگی خطوط پر جاری ہے توقع ہے کہ اتوار تک ٹرینوں کی آمد و رفت بحال کردی جائے گی ۔ انہوں نے حادثہ کی وجہ سے مالیاتی نقصانات کے بارے میں دریافت کرنے پر انہوں نے کہا کہ فی الحال متاثرین کو امداد اور تعمیراتی کاموں کو ترجیح دی جارہی ہے ۔

نقصانات کا اندازہ بعد میں لگایا جائیگا ۔دریں اثناء چیف کمشنر ریلوے سیفٹی مسٹر ڈی کے سنگھ آج حادثہ کے مقام کا معائنہ کرنے یہاں پہنچ گئے ۔ ممبئی سے موصولہ اطلاعات کے مطابق مدھیہ پردیش کے ضلع ہاردا میں پٹریوں سے اتر جانے والی جنتا ایکسپریس میں محفوظ مسافرین کو آج صبح ایک ریلیف ٹرین کے ذریعہ لوک مانیہ تلک ٹرمینس لایا گیا یہ خصوصی ٹرین پلیٹ فارم نمبر 4 پر پہنچتے ہی مسافرین کا ان کے رشتہ داروں اور ریلوے عہدیداروں نے خیر مقدم کیا ۔ سنٹرل ریلوے کے ترجمان اے کے سنگھ نے بتایا کہ جذبہ خیر سگالی کا مظاہرہ کرکے ریلوے قلیوں نے بلامعاوضہ مسافرین کا ساز و سامان اٹھا کر اسٹیشن کے باہر تک لایا ۔ مدھیہ پردیش میں اٹارسی سے روانہ خصوصی ٹرین میں 700 مسافرین سوار ہوئے تھے ۔ لیکن صرف 250 مسافرین کرلا اسٹیشن پہنچے ۔ جس میں بیشتر مسافرین بھسوال ، منماڑ ، ناسک روڈ ، کلیان اور تھانے پر اتر گئے ۔ لوک مانیہ تلک ٹرمینس پر مسافرین کی آمد کے ساتھ ہی جذباتی مناظر دیکھے گئے جہاں پر ان کے رشتہ دار ان سے گلے ملتے ہوئے اشکبار ہوگئے ۔۔

TOPPOPULARRECENT