Monday , September 24 2018
Home / اضلاع کی خبریں / جگتیال میں بنیادی ضروریات کیلئے خصوصی فنڈس درکار

جگتیال میں بنیادی ضروریات کیلئے خصوصی فنڈس درکار

جگتیال /16 فروری ( سیاست ڈسٹرکٹ نیوز ) جگتیال کی عوام کو بنیادی ضروریات کی فراہمی اور دیگر ترقیاتی و تعمیراتی کاموں کیلئے خصوصی فنڈس کی منظوری کیلئے چیف منسٹر کے سی آر کو بلدیہ چیرپرسن محترمہ ٹی وجیہ لکشمی نے تحریری مکتوب روانہ کیا ۔ جس میں انہوں نے جگتال کے مختلف مسائل سے واقف کروایا اور بایا کہ ضلع کریم نگر کا جگتیال بلدیہ گریڈ 1 میو

جگتیال /16 فروری ( سیاست ڈسٹرکٹ نیوز ) جگتیال کی عوام کو بنیادی ضروریات کی فراہمی اور دیگر ترقیاتی و تعمیراتی کاموں کیلئے خصوصی فنڈس کی منظوری کیلئے چیف منسٹر کے سی آر کو بلدیہ چیرپرسن محترمہ ٹی وجیہ لکشمی نے تحریری مکتوب روانہ کیا ۔ جس میں انہوں نے جگتال کے مختلف مسائل سے واقف کروایا اور بایا کہ ضلع کریم نگر کا جگتیال بلدیہ گریڈ 1 میونسپلٹی ہے ، 2011 سال کے آبادی کے لحاظ سے 96,490 اورموجودہ سال تقریباً 1,05,000 لاکھ آبادی ہے ۔ شہر میں 38 وارڈس ہیں ۔ جس میں 31 وارڈس کو نوٹیفائیڈ سلم علاقے اور 3 وارڈس کو نان نوٹیفائڈ علاقے کے طور پر بتایا گیا ہے ۔ جگتیال 16 کیلومیٹر کے احاطہ میں واقع ہے ۔ موجودہ آبادی کے علاوہ مختلف ضروریات کیلئے اطراف و اکناف کے مواضعات سے تقریباً 10 ہزار عوام شہر کو آیا جایا کرتے ہیں ۔ آبادی میں اضافے کو مدنظر رکھتے ہوئے شہر کی ترقی کیلئے چند اہم بنیادی ضروریات کیلئے اقدامات کرنا بے حد ضروری ہوگیا ہے ۔ سڑکوں اور ڈینس کی تعمیر اور شہر کے سرحدی علاقوں کی ترقی کیلئے سڑکوں کی تعمیر کی سخت ضرورت ہے اور سڑکوں کی توسیع وغیرہ کیلئے بلدیہ جگتیال میں فنڈس نہ ہونے کی وجہ سے ترقیاتی کام انجام دینے میں دشواریاں کا سامنا ہے ۔ شہر کی عوام اور منتخب عوامی نمائندوں کی جانب سے ہمارا وارڈ ، ہمارا شہر ، ہمارا منصوبہ پروگراموں میں تعمیراتی کاموں کے سلسلہ میں آئی ہوئی تجاویز کے مطابق 23 کروڑ کا تخمینہ تیار کیا گیا ہے ۔ اوپر بتائے گئے کاموں کے علاوہ شہر میں گندے پانی کو شہر سے دور نکاسی اور سرحدی کالونی میں واٹر ڈرین کی تعمیر کی ضرورت ہے ۔ جس کیلئے 325 لاکھ روپئے درکار ہے ۔ جگتیال ٹاون کی ترقی ، نائیٹ شیلٹر کی تعمیر اور سلاٹر ہاوز کے علاوہ میناریٹی گرلز اسکول ہاسٹل کی تعمیر میناریٹیز کیلئے گورنمنٹ آئی ٹی آئی کالج کی تعمیر وغیرہ عوامی منتخب نمائندوں کی جانب سے آئی تجاویز پر منصوبہ بنایا گیا ہے ۔ شہر میں بچوں کیلئے تعمیر کیا گیا بلدیہ پارک جو قلب شہر میں بیت ہی چھوٹا اور پرانا ہوچکا ہے ۔ نئے پارک کیلئے دھرور کیمپ میں 3.38 ایکڑ اراضی بلدیہ جگتیال کیلئے نئے پارک کی تعمیر کیلئے حوالے کی گئی ہے ۔ فنڈس نہ ہونے سے یہ تعمیری کام نامکمل ہے ۔ جس کیلئے 2 کروڑ کی ضرورت ہے ۔ پرانی بہت ہی چھوٹی جگتہ پر ایک ترکاری مارکٹ ہے جو آبادی کے لحاظسے ناکافی ہیاور آنے والے دنوں میں ضلع کا موقف حاصل کرنے جارہے جگتیال میں بڑی ترکاری مارکٹ کی ضرورت ہے ۔ جبکہ سرکاری اراضی دھرور کیمپ میں ایس آر ایس پی محکمہ کے قبضہ میں ہے ۔ عوام اور عوامی نمائندوں کی جانب سے وہاں پر مارکٹ کے قیام کا مطالبہ ہے ۔ جس کیلئے 3 کرؤڑ روپئے کی تخمینہ تیار کیا گیا ہے ۔ لحاظہ اس مارکٹ کے قیام کیلئے درکار 5 ایکڑ اراضی کی منظوری کے علاوہ 3 کروڑ روپئے منظور کرنے کی خواہش کی ۔ ماسٹر پلان اور جنکشن کی تعمیر کے سلسلے میں بلدیہ جگتیال میں فی الحال 1989 سال میں منظور کردہ ماسٹر پلان پر عمل آوری ہو رہی ہے ۔ فنڈس کی کمی کی وجہ سے ماسٹر پلان کے مطابق شہر کے اہم راستوں پر ترقیاتی کام انجام نہیں دیا جارہا ہے ۔ شہر کو ماسٹر پلان کے مطابق ترقی دینے کی ضرورت ہے ۔ جس کیلئے 45 کروڑ فنڈس درکار ہے ۔ جگتیال بلدیہ میں 1568 خواتین تنظیمیں ہیں جس میں 58 سلم لیول فائڈریشن اور (1) سمکھیا ہے جملہ 16000 خواتین کو مختلف روزگار پر مبنی تربیتی کلاسیس مناسب سینٹر کی سہولت نہیں ہے جس کی وجہ سے ضلع اور ریاست کے سینٹرس میں تربیت حاصل کرنا پڑ رہا ہے ۔ لہذا شہر میں خواتین تنظیموں کی فلاح و بہبود کیلئے شہر میں سنٹرس کا قیام عمل میں لایا جائے تو خواتین کیلئے سہولت ہوگی ۔ جس کیلئے دو کروڑ روپئے کا تحفہ تیار کیا گیا ۔ اس کیلئے دھرور کیمپ میں واقع ایس آر ایس پی کی اراضی منظور کرنے کی خواہش کی گئی ۔ عوامی نمائندوں کی جانب سے آئی تجاویز کے مطابق کونسل میں قرارداد کی منظوری کے بعد ضلعی کلکٹر اور حکومت کو مکتوب روانہ کیا گیا ہے ۔ چیرپرسن بلدیہ سے ترقیاتی کاموں کی انجام دہی کیلئے اجازت اور فنڈس کی منظوری کی خواہش کی ۔

TOPPOPULARRECENT