Tuesday , November 21 2017
Home / تفریح / جگجیت سنگھ جیسا غزل گلوکار صدیوں میں جنم لیتا ہے

جگجیت سنگھ جیسا غزل گلوکار صدیوں میں جنم لیتا ہے

دیپک سنگھ
جگجیت سنگھ نے غزل گلوکاری کے دشت خارزار کی سیاحی میں جو محنت شاقہ کی، جو ریاض کیا، اپنا مستحقہ مقام حاصل کرنے کے لئے جو جدوجہد کی۔ اس کی چیدہ چیدہ تفصیلات راقم الحروف نے جگجیت سنگھ کی برسی پر ان کو خراج عقیدت پیش کرتے ہوئے مضامین میں پیش کردی ہیں۔ ان کو اس صبر آزما سفر میں ایک ہم ذوق شریک سفر چترا سنگھ مل گئیں اور جگجیت و چترا سنگھ کی مشترکہ غزل گلوکاری نے آخر کار اپنا مستحقہ مقام پالیا۔ ان کی غزل گلوکاری کا فن نہ صرف ملک بلکہ بیرون ملک بھی دنیائے موسیقی پر راج کرنے لگا۔ اردو شاعری میں دبیر الملک نجم الدولہ مرزا اسد اللہ خاں غالبؔ سب سے مشکل پسند شاعر تھے۔ اتنے مشکل پسند کہ ان کی شاعری سمجھنا جوئے شیر لانے سے کم نہیں تھا، چنانچہ ان کی شاعری کو سمجھنے کی کوشش آج بھی جاری ہے۔ چنانچہ ’’غالبیات‘‘ کا ایک الگ شعبہ قائم ہوگیا ہے اور جتنا کچھ غالبؔ کے فن اور شخصیت کے بارے میں لکھا جاچکا ہے اس کا عشر عشیر بھی کسی دوسرے اردو شاعر کی قسمت میں نہیں آیا۔ ان کے کلام کی اسی رنگا رنگی نے ان کو ایک ابدی شخصیت بنا دیا۔ اسی مشکل پسند شاعر کی غزلوں کو جگجیت سنگھ نے اپنی غزل گلوکاری کے ذریعہ زندہ جاوید بنا دیا۔ غالب کی غزلوں کو ساز پر پیش کرنا فن گلوکاری کی معراج ہے اور جگجیت سنگھ اس مقام پر قطب تارے کی طرح جگمگاتے رہے۔ آج وہ ہمارے درمیان نہیں لیکن ان کی غزل گلوکاری اور موسیقی ان کے ذریعہ ان کے مداحوں کی تعداد میں اضافہ کرتی جارہی ہے۔

TOPPOPULARRECENT