Tuesday , September 25 2018
Home / شہر کی خبریں / جگن موہن ریڈی شکست پر بوکھلاہٹ کا شکار

جگن موہن ریڈی شکست پر بوکھلاہٹ کا شکار

چندرا بابو کو مبارکباد پیش نہ کرنے پر تنقید کا نشانہ ، وائی وی بی راجندر پرساد کا بیان

چندرا بابو کو مبارکباد پیش نہ کرنے پر تنقید کا نشانہ ، وائی وی بی راجندر پرساد کا بیان

حیدرآباد۔/22مئی، ( سیاست نیوز) وائی ایس آر کانگریس اپنا سیاسی طرز تبدیل کرتے ہوئے عوام کی خدمت کو اپنا شعار بنائے۔ مسٹر وائی وی بی راجندر پرساد ترجمان تلگودیشم پارٹی نے آج ذرائع ابلاغ کے نمائندوں سے بات چیت کرتے ہوئے یہ بات کہی۔ این ٹی آر ٹرسٹ بھون میں انہوں نے ایک پریس کانفرنس سے خطاب کے دوران کہا کہ جگن موہن ریڈی اپنی شکست پر بوکھلاہٹ کا شکار اپنے سیاسی مخالفین کو نشانہ بنانے پر اُتر آئے ہیں۔ مسٹر راجندر پرساد نے جگن موہن ریڈی کو مشورہ دیا کہ وہ اپنی شکست کو قبول کریں اور عوام میں منفی تاثرات نہ جائیں اس کے لئے عوام کے درمیان پہنچ کر اپنے طریقہ کار کو تبدیل کریں۔ انہوں نے بتایا کہ جگن موہن ریڈی شکست قبول کرنے کے بجائے جو طرز عمل اختیار کئے ہوئے ہیں اس سے ایسا محسوس ہوتا ہے کہ جگن موہن ریڈی گروہ واری رقابتوں کا نیا سلسلہ شروع کرنا چاہتے ہیں۔انہوں نے جگن موہن ریڈی کو شدید تنقید کا نشانہ بناتے ہوئے کہا کہ جگن موہن ریڈی اپنے گھمنڈ اور تکبر کے باعث عوامی تائید کھوچکے ہیں۔ مسٹر راجندر پرساد نے کہا کہ سیاسی اختلافات اپنی جگہ ہوتے ہیں لیکن اس کے باوجود میدان سیاست میں شکست و کامیابی پر قائدین ایک دوسرے سے نبردآزما نہیں ہوتے بلکہ کامیاب ہونے والے قائدین کو شکست خوردہ قائدین مبارکباد پیش کرتے ہیں۔ انہوں نے بتایا کہ صدر تلگودیشم مسٹر این چندرا بابو نائیڈو و چیف منسٹر آندھرا پردیش کی کامیابی پر انہیں ملک بھر کے سیاسی قائدین کے علاوہ بین الاقوامی سطح پر موجود تلگوعوام کی جانب سے مبارکبادیاں موصول ہورہی ہیں لیکن منقسم آندھرا پردیش کی اسمبلی میں اہم اپوزیشن کی حیثیت سے بیٹھنے والے مسٹر وائی ایس جگن موہن ریڈی نے تاحال مسٹر نائیڈو کو مبارکباد پیش نہیں کی جس سے اندازہ ہوتا ہے کہ وہ نہ صرف بدعنوانیوں و بے قاعدگیوں کے ذریعہ حاصل کردہ دولت کے نشہ میں ہیں بلکہ وہ اخلاقیات سے بھی عاری سیاستداں ہیں۔ مسٹر وائی وی بی راجندر پرساد نے جگن موہن ریڈی کو مشورہ دیا کہ وہ چیف منسٹر کے عہدہ کے خواب دیکھنا ترک کردیں چونکہ عوام نے انہیں بری طرح سے مسترد کردیا ہے۔

Top Stories

TOPPOPULARRECENT