Thursday , January 18 2018
Home / شہر کی خبریں / جگن موہن ریڈی پر ضابطہ اخلاق کی خلاف ورزی کا الزام

جگن موہن ریڈی پر ضابطہ اخلاق کی خلاف ورزی کا الزام

تلگودیشم کارکنوں کو زدو کوب کرنے کا بھی ادعا ۔ ڈی اوما مہیشور راؤ کا بیان

تلگودیشم کارکنوں کو زدو کوب کرنے کا بھی ادعا ۔ ڈی اوما مہیشور راؤ کا بیان

وجئے واڑہ 3 مئی ( پی ٹی آئی ) تلگودیشم پارٹی نے آج الزام عائد کیا کہ وائی ایس آر کانگریس کے صدر جگن موہن ریڈی نے کرشنا ضلع کے میلاورم ٹاؤن میں اپنے روڈ شو کو اجازت نامہ کی حدود سے باہر تک لاتے ہوئے انتخابی ضابطہ اخلاق کی خلاف ورزی کی ہے ۔ تلگودیشم لیڈر ڈی اوما مہیشور راؤ نے ‘ جو میلاورم اسمبلی حلقہ سے مقابلہ کر رہے ہیں اخباری نمائندوں سے بات چیت کرتے ہوئے کہا کہ جگن نے میلاورم میں 12 بجے رات تک اپنا روڈ و جاری رکھا ہے لیکن پولیس کی جانب سے ان کے خلاف کوئی کارروائی نہیں کی گئی اور روڈ شو جاری رکھنے کا موقع دیا گیا ۔ انہوں نے بتایا کہ خود انہوں نے اور میلاورم حلقہ لوک سبھا کے امیدوار کے سرینواس نے ضلع الیکشن آفیسر سے اس سلسلہ میں شکایت درج کروائی ہے ۔ انہوں نے ادعا کیا کہ وائی ایس آر کانگریس کے کارکنوں نے اے کونڈورو اور کمبھام پاڑو گاووں میں تلگودیشم کارکنوں کے ساتھ بدسلوکی کی اور انہیں زد و کوب بھی کیا ہے ۔ انہوں نے بتایا کہ تلگودیشم کے تقریبا 10 کارکن زخمی ہوئے ہیں۔ اس دوران جگن موہن ریڈی نے آج بھی نندی گاما اور جگیاپیٹ اسمبلی حلقوں میں اپنا روڈ شو جاری رکھا اور وہاں انہوں نے عوام سے خطاب کیا ۔ جگن موہن ریڈی نے 30 اپریل سے اپنے روڈ شوز شروع کئے تاکہ ضلع میں اسمبلی کی 12 نشستوں کیلئے انتخابی مہم چلائی جاسکے ۔ جئے سمیکھیا آندھرا پارٹی کے سربراہ اور سابق چیف منسٹر کرن کمار ریڈی بھی یہاں روڈ شوز منعقد کر رہے ہیں۔ ان کا ادعا ہے کہ ریاست کو تقسیم ہونے سے ابھی بھی بچایا جاسکتا ہے جس کیلئے ہر گوشے کو مل جل کر کوششیں کرنا چاہئے ۔ سیما آندھرا میں 7 مئی کو اسمبلی کی 175 اور لوک سبھا کی 25 نشستوں کیلئے انتخابات ہونے والے ہیں۔ ان انتخابات کیلئے تمام تیاریاں مکمل کرلی گئی ہیں اور بڑے پیمانے پر سکیوریٹی انتظامات کئے جارہے ہیں۔ مرکزی نیم فوجی دستوں کی تقریبا 272 کمپنیاں سیما آندھرا میں متعین کی جارہی ہیں اور ریاستی پولیس بھی دستیاب رہے گی ۔

TOPPOPULARRECENT