جگن موہن ریڈی کی پرجا سنکلپ یاترا کی سریکاکلم میں آمد

اے پی کی تلگودیشم حکومت پر تنقید، طوفان متاثرین کو امداد فراہمی میں ناکام ہونے کا الزام
حیدرآباد۔/25 نومبر، ( سیاست نیوز) صدر وائی ایس آر کانگریس پارٹی و قائداپوزیشن آندھرا پردیش قانون ساز اسمبلی مسٹر وائی ایس جگن موہن ریڈی کی گذشتہ ماہ سے جاری ’’ پرجا سنکلپ یاترا ‘‘ پدیاترا آج ضلع وجیا نگرم میں اختتام کو پہنچنے کے بعد ضلع سریکاکلم میں داخل ہوئی۔ جگن کی پدیاترا ویراگٹم منڈل کے ذریعہ ضلع سریکا کلم میں داخل ہوئی۔ اس موقع پر جگن موہن ریڈی کا عوم کی جانب سے فقیدالمثال استقبال کیا گیا۔ سینئر قائدین وائی ایس آر کانگریس پارٹی بالخصوص ضلع سریکاکلم و وجیا نگرم سے تعلق رکھنے والے قائدین مسرس دھرمنا پرساد راؤ، کرشنا داس، ٹی سیتا را م و دیگر قائدین کثیر تعداد میں موجود تھے۔ ضلع سریکاکلم کے دس حلقہ جات اسمبلی میں جگن موہن ریڈی کی پدیاترا جاری رہے گی۔ اس موقع پر جگن موہن ریڈی نے ریاستی تلگودیشم حکومت کو اپنی سخت تنقید کا نشانہ بنایا اور کہا کہ چیف منسٹر چندرا بابو نائیڈو نے ریاست میں غریب عوام کی فلاح و بہبود کو بالکلیہ طور پر نظر انداز کردیا اور عوام سے گزشتہ انتخابات میں کئے ہوئے وعدوں کو اور دیئے ہوئے تیقنات کو پورا کرنے میں ناکام ثابت ہوئے۔ جگن موہن ریڈی نے الزام عائد کیا کہ ریاستی حکومت سریکاکلم میں گزشتہ دنوں تتلی طوفان سے پیش آئے نقصانات اور تباہ کاریوں کے متاثرین کو راحت و امداد کی فراہمی میں ناکام رہی۔ جبکہ تلگودیشم حکومت نے صرف زبانی اعلانات و تیقنات دے کر سستی شہرت حاصل کرنے کے اقدامات کئے۔ انہوں نے عوام سے آئندہ انتخابات میں تلگودیشم پارٹی کو بہتر سبق سکھانے کی پرزور اپیل کی۔

TOPPOPULARRECENT