جھانسی میڈیکل کالج میں کٹے پاؤں معاملہ میں 2 ڈاکٹروں سمیت چار معطل

لکھنؤ،11 مارچ (سیاست ڈاٹ کام) اترپردیش کے طبی تعلیم کے وزیر آشوتوش ٹنڈن کے حکم پر جھانسی میڈیکل کالج میں ایک نوجوان کے کٹے پاؤں کے معاملہ میں ڈاکٹرو ںاور نرسوں کی لاپرواہی کے واقعہ کو سنجیدگی سے لیتے ہوئے دو ڈاکٹروں سمیت چار ملازمین کو فوری طورپر معطل کر دیا ہے ۔اس کے علاوہ اسسٹنٹ پروفیسر (آرتھوپیڈکس) ڈا کٹر پروین سراؤگي کے خلاف بھی محکمہ جاتی کارروائی کے احکامات جاری کئے گئے ہیں۔ یہ معلومات آج یہاں دیتے ہوئے ایک سرکاری ترجمان نے بتایا کہ اس پورے معاملے کی تحقیقات کا حکم دیا جا چکا ہے ۔ انہوں نے بتایا کہ معطل ہونے والوں میں ایک سینئر ریزیڈنٹ (آرتھوپیڈکس) ڈا کٹر آلوک اگروال،ای ایم اوڈا کٹر مہندر پال سنگھ، نرس انچارج دیپا نارنگ اور ششی شریواستو شامل ہیں۔ قابل غور ہے کہ جھانسی میں کل ایک اسکول بس کے پلٹ جانے سے چھ بچے اور بس کلینر زخمی ہو گیاتھا۔ اس حادثہ میں بس کلینر گھنشیام کاپاؤں کٹ گیا تھا اور اسٹریچر پر لاتے وقت اس کے کٹے پاؤں کو اس کے سر کے نیچے دکھ دیا گیا تھا۔ یہ تصویر سوشل میڈیا پر وائرل ہو گئی تھی۔

Top Stories

TOPPOPULARRECENT